حکومت کی نئی آٹو پالیسی،متوسط طبقے کیلئے گاڑی خریدنا آسان ہوجائے گا؟

نئی آٹو پالیسی کی منظوری،متوسط طبقے کیلئے گاڑی خریدنا آسان ہوجائے گا؟

وزیراعظم عمران خان نئی آٹو پالیسی کی منظوری جلد دے دیں گے ، نئی پالیسی کے منظور ہونے کے بعد متوسط طبقے کیلئے گاڑی خریدنا آسان ہوجائے گا۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سیاسی ابلاغ ڈاکٹر شہباز گل نے اس پیش رفت کے حوالے سے اپنے بیان میں کہا کہ نئی آٹو پالیسی کے تین اہداف ہیں جن میں سے سرفہرست گاڑیوں کی قیمتوں کو اس سطح پر لانا ہے کہ مڈل کلاس بھی باآسانی گاڑی خرید سکیں۔

ڈاکٹر شہباز گل نے مزید کہا کہ نئی پالیسی کا دوسرا ہدف ہے کہ گاڑیوں کی زیادہ سے زیادہ پیداوار اور اسمبلنگ مقامی سطح پر ہو، جبکہ تیسرے ہدف میں گاڑیوں کی ایکسپورٹ میں اضافہ کرنا ہے۔

ڈاکٹر شہباز گل نے اپنے پیغام میں اس پالیسی پر کام کرنے والے وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار خسرو بختیار اور سابق وزیر صنعت و پیداوار حماد اظہر کو مبارکباد پیش کی۔

قبل ازیں وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا تھا کہ نئی آٹو پالیسی تمام اسٹیک ہولڈرز کو یکساں فوائد فراہم کرے گی اس پالیسی سے مینوفیکچرز، صارف اور حکومت کو یکساں اس سے مستفید ہوسکیں گے۔

واضح رہے کہ پاکستان کی پہلی آٹو موٹیو ڈویلپمنٹ پالیسی 2016-2021 رواں ماہ کے اختتام پر ایکسپائر ہوجائے گی، موجودہ حکومت نے نئی پالیسی کیلئے گاڑیاں بنانے والی کمپنیوں سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز سے متعدد میٹنگز اور طویل مشاورت کی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نئی آٹو پالیسی میں حکومت خصوصی طور پر الیکٹرک وہیکلز کی پاکستانی مارکیٹ میں دستیابی پر توجہ دے گی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >