بجٹ میں ٹیکس چھوٹ، چھوٹی گاڑیاں کتنی سستی ہوں گی؟قیمت جانیئے

وفاقی حکومت کی جانب سے بجٹ 22-2021 پیش کر دیا گیا جس میں حکومت نے چھوٹی گاڑیوں پر عائد سیلز ٹیکس میں چھوٹ دی ہے جس کے نتیجے میں 850 سی سی تک والی گاڑیوں کی قیمت میں ممکنہ طور پر واضح کمی کا امکان ہے۔

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کی جانب سے قومی اسمبلی میں بجٹ پیش کیا گیا جس میں انہوں نے بتایا کہ درآمد شدہ 850 سی سی گاڑیوں پر کسٹم اور ریگولیٹری ڈیوٹی پر چھوٹ دی جارہی ہے۔ پہلے سے بننے والی گاڑیوں اور نئے ماڈل بنانے والوں کو ایڈوانس کسٹم ڈیوٹی سے استثنیٰ دیا جارہا ہے۔

شوکت ترین نے بجٹ تقریر میں مزید کہا کہ مقامی تیار کردہ 850 سی سی والی گاڑیوں پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی میں چھوٹ اور سیلز ٹیکس میں کمی کی جا رہی ہے۔ مقامی تیار گاڑیوں پر سیلز ٹیکس کی شرح 17 فیصد سے کم کرکے 12.5 فیصد کی جارہی ہے، مقامی تیار گاڑیوں پر ویلیو ایڈڈ ٹیکس ختم کیا جا رہا ہے۔

یاد رہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے پیش کیے گئے بجٹ 22-2021 کی روشنی میں پاکستان میں ملنے والی عام چھوٹی گاڑیوں کی قیمتیں اب کچھ اس طرح ہونے کا امکان ہے۔

سوزوکی آلٹو وی ایکس کی قیمت 11لاکھ 98 ہزار سے کم ہو کر 11 لاکھ 24 ہزار، سوزوکی آلٹو وی ایکس آر کی قیمت 14 لاکھ 33 ہزار سے کم ہو کر 13 لاکھ 45 ہزار، سوزوکی آلٹو وی ایکس ایل کی قیمت 16 لاکھ 33 ہزار سے کم ہو کر 15 لاکھ 30 ہزار تک ہونے کا امکان ہے۔

۔جبکہ پرنس پرل کی قیمت 11 لاکھ 49 ہزار سے کم ہو کر 10 لاکھ 77 ہزار تک ہونے کا امکان ہے

اور یونائیٹڈ براوو کی قیمت 10 لاکھ 99 ہزار سے کم ہو کر 10 لاکھ 30 ہزار روپے تک ہونے کا امکان ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >