لاک ڈاؤن کے باعث شاپنگ مالز نے دکانوں کے کرایے معاف کردیے

لاک ڈاؤن کے باعث شاپنگ مالز نے دکانوں کے کرایے معاف کردیے

ملک بھر کے تقریبا تمام شاپنگ مالز جن میں کراچی کے ڈولمن مال، لکی ون مال، لاہور کے پیکجز مال ، مال آف لاہور اور اسلام آباد کے سینٹورس مال شامل ہیں، دکانوں کے کرایے یا تو معاف کردیے ہیں یا مارچ اور اپریل کے کرایوں پر ڈسکاؤنٹس دے دیئے ہیں۔

پاکستان ریٹیل بزنس کونسل اور پاکستان چین سٹور ایسو سی ایشن نے مشترکہ طور پر تمام شاپنگ مالز مالکان کو خط لکھے ہیں جس میں تمام ریٹیل دکانداروں کو لاک ڈاؤن کے دوران رینٹ ریلیف دینے کا کہا گیا ہے کیونکہ دکانوں کی بندش کی وجہ سے دکاندار کرایہ دینے کی پوزیشن میں نہیں ہیں، ذرائع کے مطابق مالز مالکان کو یہ مطالبہ ماننا ہوگا کیونکہ تمام ریٹیلرز نے اس معاملے پر اتحاد کرلیا ہے۔

لاک ڈاؤن کے باعث شاپنگ مالز نے دکانوں کے کرایے معاف کردیے
پاکستان ریٹیل بزنس کونسل گل احمد، آؤٹ فٹرز، کھاڈی، باٹا ، سروس سمیت دیگر بڑے ریٹیلر برانڈز پر مشتمل ہے، جس کے سربراہ گل احمد کے زید بشیر ہیں جبکہ پاکستان چین سٹور ایسوسی ایشن سٹائلو، ماریہ بی، سفائر سمیت 200 سے زائد برانڈز پر مشتمل ہے۔

ذرائع کے مطابق ابھی انفرادی سطح پر کرایہ داروں کو دکان مالکان  کسی قسم کی لچک کا مظاہرہ نہیں کررہے، جیسے ہی مالز مالکان کی جانب سے 3 ماہ کے کرایوں پر ریلیف ملے گا انفرادی سطح پر بھی دکان مالکان پر دباؤ ڈالا جائے گا کہ دکان داروں کو ریلیف دیا جائے۔

لاک ڈاؤن کے باعث شاپنگ مالز نے دکانوں کے کرایے معاف کردیے
ایک مال میں کسی دکان کااوسط کرایہ 400 روپے فی مربع فٹ ہوتا ہے، لیکن بڑے بڑانڈز جن کے آوٹ لیٹس بڑے رقبے پر بنے ہوتے ہیں وہ اس سے کم میں بھی جگہ حاصل کرلیتے ہیں جیسا کہ کھاڈی بہت سے مالز میں 200 روپے فی مربع فٹ کے حساب سے کرایہ دیتا ہے، اس طرح اوسط رینٹ 200 سے 600 روپے فی مربع فٹ ہے جس میں سے 350 سے 400 روپے کے حساب سے ڈسکاؤنٹ ملنے کا امکان ہے۔
ڈسکاؤنٹ کا ہرگز مطلب یہ نہیں ہوگا کہ دکانداروں کو کچھ بھی ادا نہیں کرنا پڑے گا، ابھی بھی وہ بند دکانوں پر 100 روپے فی مربع فٹ کومن ایریا مینٹنس چارجز کی مد میں ادا کررہے ہیں۔

لاک ڈاؤن کے باعث شاپنگ مالز نے دکانوں کے کرایے معاف کردیے
دوسری جانب لاک ڈاؤن کے باعث دکانیں بند ہونے کی وجہ سے دکانداروں کو کافی نقصان کا سامنا ہے، کرایہ میں ریلیف کے باوجود انہیں عملے کی تنخواہوں اور دیگر اخراجات کی مد میں بھاری رقوم ادا کرنی ہیں جس کو پورا کرنے کیلئے تمام برانڈ ز کی جانب سے آن لائن سٹورز پر سیل لگا دی گئی ہیں تاکہ اخراجات پورے کیے جاسکیں۔

 

    Minister (2k + posts)

    A stupid concept. If any one wants to help shopkeepers he/the organisation/the government should help them with cash. Ordering shop owners to waive off rents is silly and ridiculous. The rents should be received as per agreement and no compromise should be made on this. Yes, if the shopkeepers also promise to waive off the price of goods sold to customers, then it it is another thing.

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More