کرونا وائرس کی معاشی تباہ کاریاں، امریکی معیشت 4.8 فیصد گراوٹ کا شکار

کرونا وائرس کی معاشی تباہ کاریاں، امریکی معیشت 4.8 فیصد گراوٹ کا شکار۔۔کرونا کی وجہ سے شرح نمو میں کمی عالمی کساد بازاری سے بھی کہیں زیادہ

کرونا وائرس کی وجہ سے بھیانک معاشی تباہی کے اثرات سامنے آنے لگ گئے ہیں، اور نتیجے کے طور پر امریکی معیشت 4.8 فیصد گراوٹ کا شکار ہوگئی ہے۔

امریکی ادارہ بیورو آف اکنامک کی جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جی ڈی پی میں کمی کورونا وائرس کے باعث چونکہ لوگوں کو گھروں میں رہنے کے لیے کہا گیا، اس وجہ سے وقوع پذیر ہوئی۔

خبررساں ایجنسی کے مطابق عالمی سطح پرطلب میں کمی سے امریکی درآمدات میں 25.3 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکی برآمدات میں کل 8.7 فیصد کمی ہوئی جب کہ کاروباری سرمایہ کاری میں 8.6 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

عالمی خبررساں ایجنسی نے امریکی ادارہ بیورو آف اکنامک کے حوالے سے بتایا ہے کہ شرح نمو میں کمی عالمی کساد بازاری سے بھی کہیں زیادہ ہے۔

دوسری جانب امریکہ میں کرونا وائرس کی وبا کی وجہ سے لاکھوں افراد بیروزگار ہوگئے ہیں، کئی بڑی بڑی کمپنیاں اور برانڈ بند ہوگئے ہیں، ڈاؤن سائزنگ کا عمل بھی تیزی سے جاری ہے ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >