یواے ای کو حلال گوشت ایکسپورٹ کرنے والی پاکستانی کمپنی کو بولی میں کتنے ارب کا منافع ہوا؟

متحدہ عرب امارات کو حلال گوشت ایکسپورٹ کرنے والی پاکستانی کمپنی کو بولی کی ابتدائی عوامی پیشکش کے دوران 1.4بلین روپے کا منافع

آرگینک میٹ کمپنی لمیٹڈ کے سی ای او فیصل حسین کا کہنا ہے کہ عوامی پیشکش کے ذریعے حاصل کیے گئے سرمائے کو پروسیسنگ کی نئی سہولیات کے قیام کے لیے استعمال کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کے بعد ان کا اگلا ہدف چین، روس اور مشرق وسطیٰ کی منڈیاں ہیں۔

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو بڑی مقدار میں پاکستان سے حلال گوشت ایکسپورٹ کرنے والی کمپنی آرگینک میٹ کمپنی لمیٹڈ کو سٹاک ایکسچینج میں عوامی پیشکشوں کے موقع پر اچھا منافع ملا۔

کمپنی کی جانب سے40 ملین کے شیئرز فروخت کے لیے پیش کیے گئے تھے جبکہ کمپنی کو سرمایہ کاروں کی جانب سے 1 ارب 40 کروڑ روپے مل گئے۔ جس کے بعد کمپنی کے68.1 ملین کے شیئرز فروخت ہوئے۔

ٹاپ لائن سیکیورٹیز کے سی ای او کے مطابق کورونا وائرس وبائی بیماری کے معاشی اثرات کے باوجود سرمایہ کاروں کا ردعمل ہماری توقعات سے کہیں بہتر تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ معیاری حصص ، صحیح قیمتوں اور اچھی انتظامیہ والی کمپنیوں کے لئے کیپیٹل مارکیٹ میں بہت پوٹینشل موجود ہے، یہاں تک کہ اس طرح کی مشکل معاشی صورتحال میں مقامی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کے ساتھ اعلیٰ مالیت کے حامل افراد نے بھی بولی میں حصہ لیا۔

حلال گوشت کمپنی کی انتظامیہ کے مطابق اس عمل سے کمپنی کو 40 ملین حصص کی پیش کش کے ذریعے 800 ملین روپے کی پیداوار میں مدد ملے گی جو کل شیئر ہولڈنگ کا 35.8 فیصد ہے۔

کمپنی کے بانی فیصل حسین کے مطابق اس آمدنی کا استعمال کراچی میں عملدرآمد کے لئے دو نئی سہولیات کے قیام کے لئے کیا جائے گا۔ مقامی طور پر خریداری کی جانے والی کچی آفال کے لئے کورنگی پروسیسنگ یونٹ قائم کیا جائے گا جبکہ دوسری برآمدی پروسیسنگ زون پورٹ قاسم میں قائم کی جائے گی۔

انہوں نے یہ امید بھی ظاہر کی کہ پاکستان مشرق وسطیٰ میں اپنے مارکیٹ شیئر میں اضافہ کرسکتا ہے اور بھارتی مارکیٹ کا بہتر مقابلہ کر سکتا ہے۔

فیصل حسین نے کہا "ہمارے پاس برآمدی صلاحیت اور بھارت سے بہتر قسم کا گوشت ہے کیونکہ ہمارا مشرقی پڑوسی صرف بھینسوں کا گوشت برآمد کرتا ہے۔”


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >