سعودی عرب کی تیل کی برآمدات میں گزشتہ سال کی نسبت 55 فیصد کمی ریکارڈ

سعودی عرب کی تیل کی برآمدات میں گزشتہ سال کی نسبت 55 فیصد کمی ریکارڈ

کورونا وبا کے باعث عالمی معیشت میں آںے والے سست روی کو صدی کے بدترین معاشی بحران کا پیش خیمہ قرار دیا جارہا ہے۔ اسی کے باعث دنیا میں تیل کی قیمتوں میں بھی کمی واقع ہوئی اور جن ممالک کی برآمدات کا زیادہ انحصار تیل پر تھا انہیں بہت بڑا دھچکا بھی لگا ہے۔

سعودی عرب کے ادارہ شمایارت کے مطابق گزشتہ برس جون کے مقابلے میں رواں سال جون کے مہینے میں سعودی عرب کی تیل کی برآمدات میں 55 فی صد کمی ہوئی جو کہ سعودی عرب کی مجموعی آمدن میں 8.7 ارب ڈالر کی کمی کے برابر ہے۔

جبکہ پچھلے مہینے جولائی میں سعودی عرب کی تیل کی مجموعی برآمدات میں کچھ بہتری آئی ہے اور ایک ماہ کے دوران ان میں 19.01فیصد اضافہ ہوا ہے جو کہ 1.86 ارب ڈالر کے مساوی بنتا ہے۔

سعودی آرامکو تیل کی پیداوار کرنے والی دنیا کی سب سے بڑی کمپنی ہے تاہم اسے انتہائی سستے نرخوں پر تیل کی فروخت کے بارے میں حکمت عملی متعین کرنے میں مسائل کا سامنا ہے۔ واضح رہے کہ رواں سال مئی میں سعودی عرب کی سال بہ سال تیل کی برآمدات میں 12 ارب ڈالر کی کمی ریکارڈ کی گئی تھی۔ مگر اب صورتحال بتدریج بہتری کی جانب جا رہی ہے۔

  • Allah doesnt like arrogant people ….. now its time of downfall these arrogant proud Arabs .Allah S.T blessed them with wealth & resources but they used these against poor Muslims & stood by Non Muslims ,,,Allah ke ghar der hey andher nahein


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >