حکومت کا گاڑیوں کی بلیک مارکیٹنگ روکنے کیلئے نیا نظام لانے کا اعلان

ملک میں گاڑیوں کی بلیک مارکیٹنگ روکنے کیلئے نظام لایا جائے گا،حماد اظہر

ملک میں گاڑیوں کی ریکارڈ توڑ فروخت پر نجی ٹی وی کے میزبان کامران خان نے پروگرام کیا اور بتایا کہ صرف ملک میں گاڑیوں کی ریکارڈ فروخت نہیں ہورہی بلکہ بلیک مارکیٹنگ بھی ریکارڈ توڑ دیکھنے میں آرہی ہے، ہنڈا ٹویوٹا سوزوکی معمول کی قیمت پرخریدنا جوئے شیر لانا ہے،امپورٹڈ گاڑیوں میں بھی بلیک مارکیٹنگ عروج پر ہے،

کامران خان نے بتایا کہ جولائی سے دسمبر تک گاڑیوں کی فروخت میں تقریباً چودہ فیصد اضافہ ہواہے، دسمبر میں بیس فیصد اضافہ ہوا، نومبر میں ریکارڈ توڑ تریسٹھ فیصد گاڑیاں فروخت ہوئی ہیں،

گاڑیوں کی فروخت میں اب بلیک مارکیٹنگ بھی عروج پر ہے، جی ہاں دنیا بھر میں گاڑیاں فروخت کرنے والوں کو مختلف ڈسکاؤنٹس ملتے ہیں، لیکن پاکستان میں اون یا پریمیئم منی کے بغیر نئی گاڑی ملنا تقریباً ناممکن ہے،آج گاڑی بک کروائیں تو کمپنی مالک کم از کم چھ مہینے انتظار کروائیں گے۔

کامران خان نے بتایا کہ پاکستان کے آٹوسیکٹرز پر جاپان کی تین کمپنیاں ہونڈا، ٹویوٹا اور پاک سوزکی موٹرز کی اجارہ داری ہے،گزشتہ تیس برسوں سے ان کمپنیوں نے اپنی گاڑیوں کی پیداوار میں دانستہ طور پر اضافہ نہیں کیا تاکہ ڈیمانٖڈ بڑھتی رہے،اور بلیک مارکیٹنگ چلتی رہے،کہ خریدار زیادہ ہیں اور نئی گاڑیاں کم ہیں،اس طرح اون منی کا کاروبار جاری و ساری ہے،کمپنیز بھی ان کے ساتھ ملی ہوئی ہیں۔

کامران خان نے گاڑیوں کی ریکارڈ فروخت اور ریکارڈ بلیک مارکیٹنگ کے حوالے سے وفاقی وزیر برائے صںعت و پیداوار حماد اظہر سے گفتگو کی،حماد اظہر نے کہا کہ اس سال گاڑیوں کی فروخت میں چالیس فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا، ڈیمانڈ زیادہ سپلائی کم ہونے کی وجہ سے بلیک مارکیٹنگ بڑھی ہے،حکومت نے اون منی کا نظام ختم کرنے کیلئے سسٹم نکالا ہے،کابینہ نے ایسا ٹیکس لاگو کیا ہے کہ نئی گاڑی خرید کر چھ ماہ میں فروخت کرنے پر ٹیکس ادا کیا جائے گا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ اس ٹیکس سے وہ سرمایہ کار جنہیں گاڑی کی ضرورت نہیں ہوتی وہ مارکیٹ کا فائدہ اٹھاتے ہوئے گاڑیاں خریدتے ہیں اور انہیں روک کر اون کماتے ہیں،ان کی حوصلہ شکنی کرنی ہے، کیا،پروٹون سمیت دیگر کمپنیوں کی ملک میں سرمایہ کاری سے رسد بھی مکمل ہوگی، بلیک مارکیٹنگ روکنے کیلئے صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کر،بورڈ آف ریونیو کے ساتھ بیٹھ کر بات کرینگے،گاڑیاں رجسٹر ہوتی ہیں اس کیلئے نیا نظام وضع کرینگے، کیا،فوٹون سمیت دیگر کمپنیاں جو آنے والی ہیں ان سے مقابلہ سخت ہوگا۔

حماد اظہر نے الیکٹریکل وہیکل کے بارے میں بتایا کہ اس حوالے سے کابینہ پالیسی منظور کرچکی ہے،اس کے ایس آر اوز جلد ایشو ہوجائیں گے،الیکٹریکل وہیکل کی امپورٹ پر ٹیکس کم کردیئے،چارجز اور دیگز چیزوں پر ٹیکس کم کئے، گاڑیوں کی قیمت میں کمی لانے کیلئے اقدامات کئے گئے۔

  • Govt is also involved in this GORAKH DHANDHA.. Dunia ka wahid mulk hai jo dosri countries k investors ko openly offer karta hai k aao aur pakistanio ko looto bus hamein hamara hissa de dena,,
    jo car India mein 1 million Rs ke hai wahi pakistan mein 3 Million Rupess se b mehngi hai,, kiu bhai?


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >