رواں مالی سال میں ایف بی آر نے مقرر کردہ ہدف سے 100 ارب زائد ٹیکس وصول کر لیا

 

ایف بی آر (فیڈرل بورڈ آف ریونیو) مالی سال 21-2020 جولائی تا مارچ کے دوران اپنے مقرر کردہ ٹیکس ہدف سے 100 ارب زائد ٹیکس جمع کر لیا۔ ادارے کے مطابق ان 9 ماہ کے دوران ٹیکس ریونیو پچھلے سال کی نسبت 13 فیصد زیادہ ریکارڈ کیا گیا۔ جولائی تا مارچ 2021 کے دوران مجموعی طور پر 3394ارب روپے کا ریونیو حاصل کیا گیا جو مقررہ ہدف 3287 ارب روپے کے ہدف سے100 ارب سے بھی زائد ہے۔

اعدادوشمار کے مطابق 28 فروری 2021 تک ٹیکس سال 2020 کے لیے انکم ٹیکس گوشوارے داخل کرنے والوں کی تعداد 28 لاکھ ہو چکی ہے جو پچھلے سال اس عرصہ تک 26 لاکھ تھی۔

ایف بی آر کے مطابق ٹیکس گوشوارے داخل کرنے والوں کی تعداد میں 8 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ ٹیکس گوشوارں کے ساتھ ادا شدہ ٹیکس51 ارب روپے رہا جو پچھلے سال کے اسی عرصے میں 33ارب روپے تھا۔ اس سال گوشواروں کے ساتھ ٹیکس ادائیگی میں 54 فیصد اضافہ حاصل ہوا ہے۔

پچھلے مالی سال کے 9 ماہ کے 3178 ارب روپے کے مقابلے میں 3571ارب روپے ریونیو اکٹھا ہوا۔ رواں مالی سال میں اب تک 177 ارب روپے کے ریفنڈز جاری کیے گئے ہیں جبکہ پچھلے سال کے اسی عرصے کے دوران 102ارب روپے کے ریفنڈز جاری ہوئے تھے۔ اس سال اب تک ریفنڈز کے اجرا میں 74 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

ایف بی آر نے بتایا کہ نئے ریٹرن فائلرز کی تعداد 1لاکھ 23 ہزار 680 رہی اور 51 کروڑ روپے کا اضافی ٹیکس حاصل ہوا۔ رواں مالی سال جولائی تا فروری سیلز ٹیکس ریٹرنز داخل کرنے والوں کی تعداد 1 لاکھ 79 ہزار 584رہی ہے جو پچھلے سال اس عرصہ میں ا لاکھ 67 ہزار 769 تھی۔

اس سال سیلز ٹیکس گوشوارے داخل کرنے والوں کی تعداد میں 7.04 فیصد اضافہ ہواہے۔ سیلز ٹیکس گوشواروں کے ساتھ اس سال 624 ارب روپے سیلز ٹیکس حاصل ہواجو پچھلے سال 536 ارب روپے تھا اس طرح 16.41 فیصد اضافہ حاصل ہوا۔ جو کہ حکومت کی ٹیکس اکٹھا کرنے کے حوالے سے کئی گئی اصلاحات کی یقیناً کامیابی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >