آئی ایم ایف غریب ممالک کو رعایتی قرضے دے گا

آئی ایم ایف ایگزیکٹو بورڈ نے غریب ممالک کو رعایتی قرضے فراہم کرنے کی منظوری دے دی۔

عالمی ادارے نے کہا کہ اب ایمرجنسی فنڈز کے بجائے طویل مدتی قرضے دیئے جائیں گے، قرضوں کی عمومی حد سے 45 فیصد زیادہ قرضے دیئے جائیں گے۔قرضے زیروشرح سود پر دئیے جائیں گے ۔

آئی ایم ایف کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ غریب ممالک کو رعایتی قرض فراہم کرنے کا مقصد کورونا سے نمٹنا اور معاشی بحالی میں مدد دینا ہے۔

رپورٹ کے مطابق آئی ایم ایف بورڈ نے غربت میں کمی، معاشی ترقی کی حکمت عملی بھی منظور کر لی ہے۔

آئی ایم ایف نے کہا کہ 2020 میں کم آمدنی والے ممالک کو قرض دینے کی حکمت عملی میں تبدیلیوں کی ضرورت ہے۔

آئی ایم ایف فنانس ڈیپارٹمنٹ کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف بورڈ نے دو مرحلہ پر فنڈنگ کی حکمت عملی منظور کرلی ہے جو کورونا سے نمٹنے کے لیے ضروری وسائل کو بروئے کار لائے گی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>