تحریک انصاف کی حکومت نے3 سال میں کتنا قرض لیا اور کتنی رقم پرانے قرض کی مد میں دی؟

تحریک انصاف حکومت پر الزام لگایا جاتا ہے کہ اس نے ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ قرضے لئے لیکن یہ نہیں بتایا جارہا کہ پچھلی حکومتوں کے کتنے ارب ڈالر کے قرضے اور سود ادا کیا؟ اسٹیٹ بنک نے رپورٹ جاری کردی ہے

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی وفاقی حکومت نے تین سال کے دوران 27 ارب ڈالر کے نئے قرضے لئے، جبکہ 39 ارب ڈالر سے زائد کا قرض و سود پرانے قرضوں کی مد میں ادا کیا۔

اس وقت غیر ملکی قرضوں کا حجم تاریخ کی بلند ترین سطح پر 122 ارب ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے اعداد شمار کے مطابق ایک سال کے دوران 9 ارب ڈالر کا غیر ملکی قرض لیا گیا جبکہ 13 ارب 42 کروڑ ڈالر قرض و سود کی ادائیگی پر خرچ ہوئے۔ اس طرح موجودہ حکومت نے 3 سال میں 27 ارب ڈالر نیا قرض لیا مگر ساتھ ہی 39 ارب 59 کروڑ ڈالر قرض و سود کی ادائیگی پر بھی خرچ کیے۔

موجودہ حکومت قرض اور ادائیگیوں کا ماضی میں گزرنے والی مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کی حکومتوں سے کیا جائے تو ن لیگ نے 5 سالہ دور حکومت میں 34 ارب ڈالر کا قرض لیا تھا جبکہ 33 ارب 30 کروڑ ڈالرکا قرض و سود ادا کیا۔

اس سے قبل گزرنے والی پیپلز پارٹی کی حکومت نے 5 سالہ دور اقتدار میں 15 ارب ڈالر کا نیا قرض لیا جبکہ 24 ارب 30 کروڑ ڈالر قرض اور سود کی مد میں واپس لوٹائے تھے۔

  • Boht zulm hai. Pti aur ppp ko badnam kia howa hai jabk punjabi party noon league sab se baree badmash ha aur sara pesa punjab k wadere general kha gaya aur tareef bhi inhi ki hai. Allah ki be awaz lathe kab pakistan per paregee.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >