بھارتی ہیکرز کے ہاتھوں ایف بی آر کا سسٹم 7 روز تک ہیک رہنے کاانکشاف

وزیر خزانہ شوکت ترین نے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ میں بریفنگ دیتے ہوئے انکشاف کیا کہ ایف بی آر (فیڈرل بورڈ آف ریونیو) کا سسٹم 7 روز تک ہیک رہا، انہوں نے بتایا کہ اسے بھارتی ہیکرز کی جانب سے ہیک کیا گیا تھا۔

شوکت ترین نے مزید کہا کہ سسٹم ہیک ہونے پر جسے سزا ملنی چاہیے تھی اسے سزا دی جا چکی ہے۔ تاہم اب ایف بی آر کے سسٹم کو اپ گریڈ کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سسٹم ہیک ہونے سے ایف بی آر کے نظام کو کوئی نقصان نہیں پہنچا اور اس کا اہم حصہ فعال کر دیا گیا ہے۔ وزیر خزانہ نے یہ بھی بتایا کہ اس حوالے سے فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے انہیں ایک رپورٹ بھی پیش کی ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ ایف بی آر کی پیش کردہ رپورٹ کا غیر ملکی ماہرین جائزہ لیں گے۔ اس جائزے کے بعد ہم اپنے نظام کو پہلے سے زیادہ بہتر کریں گے تاکہ دوبارہ ایسا واقعہ پیش نہ آئے۔

یاد رہے کہ 2019 میں بھی ایف بی آر کا سسٹم ہیک کیا جا چکا ہے۔ تب بھی بھارت سے تعلق رکھنے والے ہیکرز نے ہی یہ کام کیا تھا۔

ہیکنگ کے نتائج سابق سیکرٹری خزانہ وقار مسعود اور سابق چئیرمین ایف بی آر کو بھگتنے پڑے جن کی حکومت نے چھٹی کرادی اور نیا چئیرمین ایف بی آر تعینات کردیا۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>