انٹارکٹک جزیرے پر سرخ رنگ کی برف باری

آسمان سے گرنے والی سرخ برف نے انٹارکٹیکا کے لوگوں میں خوف وہراس پیدا کردیا۔


تفصیلات کے مطابق انٹارکٹیکا میں حالیہ ہونے والی سرخ برفباری نے سڑکوں کو خون سے رنگ دیا۔ جس کی تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہیں۔ جبکہ دوسری جانب سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ سرخ رنگ کی برف کم سورج کی روشنی کی عکاسی کرتی ہے اور تیزی سے پگھلنے کا سبب بھی بنتی ہے۔


غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سائنسدانوں نے کہا ہے کہ آب و ہوا کی تبدیلی کی وجہ سے بھی برف کا رنگ سرخ ہو گیا ہے۔ انٹارکٹیکا میں "ورناڈسکی” نامی ریسرچ بیس میں کام کرنے والے سائنسدانوں نے اسے ’راسبیری برف‘ کا نام دیا ہے۔ جبکہ انٹارکٹیکا کی وزارت کا اپنے مراسلہ میں کہنا ہے کہ اس طرح کی پڑنے والی برف اپنے گہرے سرخ رنگ کی وجہ سے آب و ہوا کی تبدیلی میں معاون ثابت ہوتی ہے۔

جاری کی گئی رپورٹ کے مطابق جب سردیوں میں سرد درجہ حرارت واپس اپنی جگہ پر آ جاتا ہے تو باضابطہ طور پر برف کی سرخ رنگت ختم ہوجاتی ہے۔ اور برف واپس اپنی سفید رنگت میں آجاتی ہے۔ جبکہ دوسری جانب قدرتی لحاظ سے اسے تربوز برف بھی کہا جاتا ہے۔ جو کہ آرکٹک، الپس اور دیگر اونچے پہاڑی ماحولیات کے ساتھ ساتھ انٹارکٹیکا میں بھی دیکھا جاتا ہے۔

  • Seriously man who is this brainless person behind this story. "Surkh Barfbari Nai Sarkon Ko Khun Sai Rung Dia” There are no roads in Antarctica. Please find someone with little self-respect for writing the articles.


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >