ماحولیات ملکی معیشت سے گہرا تعلق رکھتی ہے، ملک امین اسلم

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی کا کہنا ہے کہ ماحولیات کا بہت گہرا تعلق کسی بھی ملک کی معیشت سے ہوتا ہے۔

سیاست ڈاٹ پی کے سے خصوصی طور پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے ماحولیاتی تبدیلی ملک امین اسلم کا کہنا تھا کہ پاکستان میں آبادی کے اضافے کی وجہ سے ماحولیاتی مسائل بہت سنجیدہ ہورہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان وہ واحد پاکستانی لیڈر ہیں جنہوں نےماحولیات کی اہمیت کو نہ صرف سمجھا بلکہ سمجھانے کی بھی کوشش کی اوراسی وجہ سے پاکستان میں اس حوالے سے آگاہی جو 2013 میں 30 فیصد تھی 2018 میں 80 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہماری حکومت نے سموگ پالیسی آف پاکستان  2 برس قبل بنائی اور اس پر عمل درآمد بھی ہورہا ہے جس کی وجہ سے رواں برس سموگ کی صورتحال گزشتہ سالوں سے کافی بہتر رہی ہے۔

ملک امین اسلم نے مزید کہا کہ ہم نے خیبر پختونخوا میں ٹمبر مافیا کے خلاف جہاد کیا ہے اور پنجاب میں لینڈ مافیا کے خلاف جہاد کررہے ہیں جنہوں نے دریاؤں کے ساتھ ساتھ زمینوں پر قبضہ کرکے قدرتی حسن کو گہنا دیا تھا۔

حکومت نے بلین ٹری منصوبے کے ساتھ بلین ٹری ہنی کا منصوبہ بھی شروع کردیا ہے جس کو بہت پزیرائی مل رہی ہے، ہمیں بہت سے ممالک کی طرف سے آرڈر موصول ہورہے ہیں کہ اس منصوبے کے تحت جتنا بھی شہد جمع ہوتا ہے وہ ان ممالک کو دیا جائے، پاکستان کا المیہ یہ ہے کہ اس وقت جتنا بھی شہد بیرون ملک ایکسپورٹ ہورہا ہے اس میں ہمیں 8ڈالر فی ٹن قیمت ملتی ہے جبکہ نیوزی لینڈ اسی ایک ٹن کی قیمت 35 ڈالر فی ٹن وصول کرتا ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>