بشریٰ انصاری کا دینی مدارس اور مولویوں کے کمروں میں کیمرے نصب کرنیکا مطالبہ

Bushra Ansari
معروف اداکارہ بشریٰ انصاری نےبچوں سےبڑھتی ہوئی زیادتی کو روکنےکےلئےتعلیمی اداروں میں کیمرےنصب کرنےکا مطالبہ کردیا

میڈیاسےگفتگوکرتے ہوئے پاکستان شوبزانڈسٹری کی معروف اداکارہ بشری ٰانصاری کاکہناتھا کہ دینی مدارس اورمولویوں کے کمروں میں کیمرے نصب کرنے چاہییں۔

بشریٰ انصاری کا کہنا تھا کہ بچوں سے بڑھتی ہوئی جنسی زیادتی کوروکنے کے لئے ہمیں اس طرح کےاقدا مات کرنے پڑیں گے ۔ بچوں کےساتھ زیادتی کے واقعات میں روبروز اضافہ ہوتاجارہاہےجس سے معاشرہ بربادی کی طرف جا رہا ہے کیونکہ بچے سہم گئے ہیں، مدرسہ ہو یا اسکول ،بچے جانے سے گھبراتے ہیں،ان حالات کوبہتربنانےکےلئےہمیں کیمرے نصب کرنے پڑیں گے تا کہ ان لوگوں پر ہر لمحہ نظر رکھی جائے اور ہمارے بچوں کے مستقبل کو بچایا جائے.۔

بشریٰ انصاری کا مزید کہنا تھا کہ یہ صرف مدارس میں ہی نہیں بلکہ اسکولوں میں اساتذہ بھی بچوں پرتشددکرتےہیں جس کی وجہ سے بچوں میں خوف کی ایک لہر بیٹھ جاتی ہے.ہمیں ایسے تمام عوامل کو روکنا پڑے گا۔

اسی موضوع پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہمیں مولویوں کے کمروں میں بھی کیمرے لگانے کی ضرورت ہےکیونکہ بدفعلی کے زیادہ واقعات مدارس میں ہی ہورہے ہیں۔

    • Stupid reasoning. She is not the one raping kids in studios. Only the mullahs are. What you do with your life, you will be responsible for it on the day of judgement. But the mullahs are stealing those kids childhoods by raping them and ruining their future by not educating them for the worldly life

  • اس یہودی بچے سے کہو کہ بس اسلامی سزائیں نافذ کر دی جائیں اس میں مولوی آئے یا لبرل ملحد ٹیچر ، وکیل ہو یا جج،بشرٰی انصاری ہو یا شرمین عبید چنائے،عرفان کھوسٹ ہو یا سرمد کھوسٹ، عیاش قسم کے جرنیل ہوں یا
    گندی نسل کے سیاہ ستدان،فحش قسم
    کی اداکارائیں (مہوش حیات، ماہرہ خان، وینا ملک، میرا، نرگس ہوں یا خبیث النسل اداکار سب
    کو ایک جیسی سزائیں دی جا سکیں ہمیں تو کوئی اعتراض نہیں


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >