امریکی ایجنٹ کے الزامات پر پرویزہودبھائی اور عمارعلی جان کا ہارون رشید کو جواب

پرویز ہودبھائی اور عمار علی جان کو ایف سی کالج والوں نے کیوں نکالا؟ کیا عمار علی جان اور پرویز ہودبھائی پاکستان مخالف سرگرمیوں میں ملوث تھے اور طلباء کی برین واشنگ کررہے تھے؟ ہارون رشید کے دعوے پر عمار علی جان اور پرویز ہود بھائی کا جواب

کچھ روز قبل ہارون رشید نے اپنے پروگرام میں دعویٰ کیا کہ عمارعلی جان اور پرویز ہودبھائی کو پاکستان مخالف سرگرمیوں کی وجہ سے نکالا گیا۔ ہارون رشید نے دونوں سے متعلق دعویٰ کیا کہ یہ ایٹمی پروگرام کے مخالف ہیں۔

عمارعلی جان سے متعلق ہارون رشید نے کہا کہ یہ پی ٹی ایم کیلئے کام کرتے تھے اور این ڈی سی اور بھارتی خفیہ ایجنسی کے ایجنڈے پر تھے۔

ہارون رشید نے ڈاکٹر پرویز ہودبھائی سے متعلق دعویٰ کیا کہ وہ امریکی سفارتخانے کا نوکر ہے۔ وزیراعظم عمران خان کے دوست راشد خان کے پاس ڈاکومنٹ پڑا ہوا ہے لیکن وہ دکھاتا نہیں ہے۔

ہارون رشید کے الزامات کا جواب دیتے ہوئے ڈاکٹر پرویز ہودبھائی نے کہا کہ میرا ایک سال کا کنٹریکٹ تھا جو ختم ہوگیا ہے۔ پہلے میرا کنٹریکٹ تین سال کا تھا لیکن ایک سال کا کردیا گیا، میں نے وجہ پوچھی تو پہلے کیا گیا کہ ہم ڈاؤن سائزنگ کررہے ہیں، پھر مجھے کہا گیا کہ آپ اکیڈمک سٹینڈرڈ کمیٹی کے معیار پر پورا نہیں اترتے۔

پرویز ہودبھائی نے مزید کہا کہ کچھ لوگوں نے مجھے باور کرانے کی کوشش کی کہ میری برطرفی کے پیچھے خلائی مخلوق ہے لیکن میرے پاس ایسا کوئی ثبوت نہیں ہے۔پاکستا ن میں ہر ادارے میں ٹانگ کھینچنے والے بہت ہیں۔

دوسری جانب عمار علی جان نے فیس بک کی ایک طویل پوسٹ میں تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ ہارون صاحب نے دعویٰ کیا ہے کہ پروفیسر ہود بھائی امریکی سفارتخانےکے ملازم ہیں جب کہ میں پی ٹی ایم، سی آئی اے اور این ڈی ایس کیلئے کام کرتا ہوں۔ ہارون رشید کی ذہنی کیفیت ملاحظہ کیجئے کہ میں دنیا کی اتنی طاقتور ایجنسیوں کے لیے کام کر رہا ہوں لیکن اسکے باوجود ایف سی کالج میں اپنی ملازمت تک نہیں بچا سکا۔

عمارعلی جان نے مزید لکھا کہ ہارون رشید کی باتوں کو نظرانداز کردوں لیکن مصیبت یہ ہے کہ یہی سازشی سوچ ان حلقوں میں بھی پائی جاتی ہے جن کے ہاتھ میں باگ ڈور ہے۔ انکے مطابق ہر سوچنے والا شخص غدار ہے جو کسی دشمن کے ہاتھوں کھیل رہا ہے۔ جس کا نتیجہ یہ نکلے گا کہ ملک میں صرف ایسے چھوٹے دماغ والے لوگ رہ جائیں گے جو ایک ناکام نظام کے آگے ہر وقت سر جھکائے رہیں گے۔

عمار علی جان نے ہارون رشید کے خلاف قانونی کاروائی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ان تجزیہ نگاروں کو سبق سکھانے کا وقت آ چکا ہے تا کہ یہ آئندہ جھوٹے الزامات اور بلیک میلنگ سے دوسروں کی زندگیاں تباہ کرنا بند کر دیں۔

Yesterday, I narrated the difficulties I have encountered in finding a job. Today, Haroon Rasheed sb claims that…

Posted by Ammar Ali Jan on Monday, July 6, 2020


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >