ایک کروڑ 55لاکھ روپے سے زائد میں نیلام ہونے والے عقاب میں کیا خوبی ہے؟

 ایک کروڑ 55لاکھ روپے سے زائد میں نیلام ہونے والے عقاب میں کیا خوبی ہے؟

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عرب کے نوجوان رازق رزق اللہ الحسنانی نے عقابوں کی نیلامی میں اپنا عقاب بھی فروخت کے لیے پیش کیا اور حیران کن طور پر وہ عقاب صرف آدھے گھنٹے میں ہی 3 لاکھ 61 ہزار ریال میں نیلام ہوگیا۔

اس مہنگے ترین عقاب کو عقابوں کے شوقین ایک سعودی شخص صالح المطیری نے خریدا۔

یہ عقاب رازق رزق اللہ الحسنانی نامی شخص نے المجیرمہ نامی علاقے سے پکڑا تھا جس کی لمبائی 15 انچ، چوڑائی 16 انچ اور وزن ایک کلو 100 گرام تھا۔

اچھی قیمت ملنے پر رزاق نے دوبارہ اسی علاقے میں جا کر قیمتی عقاب کو پکڑنے کا ارادہ ظاہر کیا ہے۔

سعودی عرب میں عقاب کی اتنی اچھی قیمت ملنے کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ عرب معاشرے میں عقاب کو پسندیدہ پرندہ اور جرات اور شجاعت کی نشانی سمجھا جاتا ہے۔

  • Jab Zyada paise kam arsey mein mil jaein to phir insaan ko samajh nahi aati kidhar kidhar aise kaise uraae.

    Isi kaifeeyat ki bina par phir iss terha ke oot pataang shauq bande ki toi se janam lete hain.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >