گیارہ سالہ امارتی بچے نے 51 ممالک کے کروڑوں کو بچوں کو شکست دیدی

متحدہ عرب امارات کے شہری 11 سالہ سلطان نے عرب ریڈنگ چیلنج میں 51 ملکوں سے تعلق رکھنے والے دس لاکھ طالب علموں کو شکست دے کر دنیا کو حیران کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق متحدعرب امارات کی ریاست ابو ظہبی کے رہائشی11 سالہ سلطان المزروئی نے ایک سال میں 300 کتابوں کا مطالعہ کیا اور اپنے سے بڑی عمر کے لاکھوں طالب علموں کو شکست دیدی۔

کہتے ہیں بہترین مشغلوں میں سے ایک کتاب پڑھنا ہے مگر آج کل کے بچے کھیل کود میں بھی اتنا دل نہیں لگاتے جتنا موبائل ، کمپیوٹر اور دیگر ڈیجیٹل ڈیوائسز میں لگاتے ہیں، کتابیں پڑھنا تو اب شائد ہی کسی بوڑھے یا ادھیڑ عمر شخص کا مشغلہ رہ گیا ہو، بچے، نوجوان یا جوان لوگوں کے پاس تو اب ایسے مشغلوں کیلئے وقت ہی نہیں ہے۔

مگر 11 سالہ سلطان نے دنیا کو دکھا دیا کہ اگر آپ دل لگائیں تو یہ مشغلہ آپ کو بہت کچھ سکھا دیتا ہے، سلطان نے اس مشغلے کو اپنا شوق بنایا اور ایک سال میں 3 سو کتابیں پڑھ کر عرب ریڈنگ چیلنج جیت لیا۔

گلف نیوز سے بات کرتے ہوئے سلطان نے کہا کہ مجھے خوشی تھی کہ میں اس مقابلے کا حصہ بن رہا ہوں، مگر مجھے اس میں جیت کی بالکل امید نہیں تھی کیونکہ یہ تو ناممکن سے بات تھی۔

انہوں نے کہا میں نے تین برس کی عمر میں لکھنا شروع کردیا تھا، میری والدہ روزانہ رات کو سونے سے پہلے مجھے کہانی سناتی تھیں اور پھر وہی کہانی پڑھاتی بھی تھیں، اس وقت سے مجھے پڑھنے کا شوق پیدا ہوا اور اب مجھے بغیر کتاب پڑھے نیند نہیں آتی، اور اب تو ایسا ہوتا ہے کہ کبھی کبھار ایک دن میں 2 سو صفحات والی تین چار کتابیں پڑھ لیں، ایک کتاب کو ختم کرنے میں مجھے عموماََ تین گھنٹے لگتے ہیں۔

ابو ظہبی کے جے ایل اسکول میں زیر تعلیم سلطان نے کہا کہ میں اس سال میں تین سو کتابیں پڑھیں جن میں سیاست، فلسفہ، افسانے ، طبیعات اور کھیلوں سمیت دیگر مضامین شامل تھے، میں ڈیجیٹل ڈیوائسز میں ای بکس پڑھنے کے بجائے کتاب کو ہاتھ میں پکڑ کر پڑھنے کو ترجیح دیتا ہوں ، میں سارا وقت مطالعے میں ہی صرف نہیں کرتا بلکہ اہل خانہ اور دوستوں کو بھی وقت دیتا ہوں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >