ٹک ٹاک کے چیلنج نے دس سالہ بچی کو موت کی نیند سلا دیا

ٹک ٹاک کے چیلنج نے دس سالہ بچی کو موت کی نیند سلا دیا

اٹلی میں 10سالہ بچی ٹک ٹاک پر بلیک آؤٹ چینلج پورا کرتے ہوئے اپنی جان گنوا بیٹھی۔

اٹلی کے شہر پیلرمو کے اسپتال میں بے ہوشی کی حالت میں دس سالہ بچی کو لایا گیا، جہاں ڈاکٹروں نے اسے بچانے کے لیے سر توڑ کوششیں کیں لیکن بچی کو بچانے میں ناکام رہے اور ڈاکٹروں نے گلا بری طرح سے دب جانے کی وجہ سے بچی کو مردہ قرار دے دیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اطالوی دس سالہ ننھی بچی نے ٹک ٹاک پر جاری "بلیک آؤٹ” چیلنج کو پورا کرنے کے لیے سوشل میڈیا میں ویڈیو کے لیے اپنا گلا بیلٹ سے گھونٹ لیا اور خود کو حادثاتی طور پر ہلاک کر لیا، چیلنج کے دوران بچی کا گلا کا اس قدر دب گیا تھا کہ سانس بند ہونے کی وجہ سے اس کی موت واقع ہوگئی۔

والدین 10 سالہ ننھی پری کی حادثاتی موت کی خبر سن کر غم سے نڈھال ہو گئے جبکہ بچی کی والدہ پر اپنی بیٹی کی موت کی خبر سن کر غشی کے دورے پڑنے لگے، ہسپتال انتظامیہ کے استفسار پر بچی کے والدین نے بچی کے جسمانی اعضاء عطیہ کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ ایک سال سے سوشل میڈیا کی سائٹس پر بلیک آؤٹ  چیلنج تیزی سے گردش کر رہا ہے، جسے اب تک ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک پر سب سے زیادہ لوگوں کو کرتا ہوا دیکھا گیا ہے، اس کھیل کو "بیہوشی کا کھیل”، "گھٹن کا کھیل” یا "اسپیڈ ڈریمنگ” کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، جس میں سوشل میڈیا صارفین کچھ سیکنڈز کے لئے خود کو خطرناک قسم کی اسٹنٹ میں سے گزارتے ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>