عامر لیاقت کی تیسری بیوی ہونے کا دعویٰ کرنے والی ہانیہ عامر لیاقت کے گھر پہنچ گئیں

عامر لیاقت کی تیسری بیوی ہونے کا دعویٰ کرنے والی ہانیہ عامر لیاقت کے گھر پہنچ گئیں۔۔ کے والد نے معاملے کا ڈراپ سین کر دیا

مذہبی سکالر، سیاستدان اور ٹی وی میزبان عامر لیاقت کی تیسری بیوی ہونے کی دعویدار لڑکی ہانیہ خان ان کے کراچی آفس کے باہر پہنچ گئی اور ہنگامہ برپا کر دیا۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق عامر لیاقت کی تیسری بیوی ہونے کا دعویٰ کرنے والی لڑکی نے عامرلیاقت کے گھر کے باہر احتجاج کیا، گالیاں نکالیں اور عامر لیاقت کو للکارتی رہیں کہ باہر نکلو ورنہ میں اپنے کپڑے پھاڑ دو ں گی۔۔ میں کسی سے نہیں ڈرتی ، میں ہانیہ عامرلیاقت ہوں

ہانیہ خان کے والد نے اپنی بیٹی اور عامر لیاقت کے نکاح کی تردید کردی۔ سوشل میڈیا ایپ انسٹا گرام پر معروف میزبان اور پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت نے ہانیہ خان نامی اداکارہ کے ساتھ تیسری شادی کے حوالے سے وضاحتی پیغام جاری کیا اور ساتھ میں ہانیہ کے والد طارق پرویز کا ویڈیو پیغام بھی شیئر کر دیا۔

ویڈیو پیغام میں ہانیہ خان کے والد نے سارے معاملے کا ڈراپ سین کرتے ہوئے اپنی بیٹی کو ذہنی مریضہ اور ڈپریشن کا شکار بتایا۔ ہانیہ کے والد نے کہا کہ میری بیٹی اور عامر لیاقت کا کوئی نکاح نہیں ہوا۔ عامر لیاقت ہمارے گھر آئے تھے اور انہوں نے ہماری مدد کی تھی اور واپس چلے گئے۔

ہانیہ کے والد نے کہا میری بیٹی ڈپریشن کا شکار ہے ،وہ کراچی آئی تھی اور میں اسے واپس اپنے ساتھ لے کر جارہا ہوں۔ انہوں نے تمام لوگوں سے گزارش کی کہ کوئی بھی ایسی بات نہ کرے جس سے عامر لیاقت کے نام پر حرف آئے۔ میری بیٹی نے جو بھی عامر لیاقت کے ساتھ کیا اس کی طرف سے میں عامر لیاقت سے معذرت چاہتا ہوں۔

انہوں نے کہا کوئی نکاح نہیں ہوا کیونکہ اگر نکاح ہوا ہوتا تو ماں باپ کو تو پتہ ہوتا۔ ڈاکٹر عامر لیاقت نے اس ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے طویل کیپشن لکھا انہوں نے کہا کہ میں بہت دل گرفتہ اور رنجیدہ تھا، جانتا ہوں آپ میں سے بہت سے لوگوں کو مجھ سے نفرت ہے اور اس نفرت سے مجھے کبھی نفرت نہیں ہوئی کیونکہ سب کو اپنی اپنی قبر میں اپنا اپنا حساب دینا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں نے اللہ کے حضور اپنے تمام معاملات سپرد کرکے صرف ایک فریاد کی کہ اے میرے پروردگار تُو جانتا ہے کہ میں بے قصور ہوں ، میں نے کوئی نکاح کیا نا تیرے حبیب صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی شریعت مطہرہ کا معاذ اللہ مذاق اڑایا لیکن میرا کرتا پیچھے سے پھاڑا گیا، عزت کو تار تار کرنے کی کوشش کی گئی۔

ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے ہانیہ کو ایک مخبوط الحواس، ذہنی بیمار اور تصورات میں رہنے والی لڑکی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس لڑکی نے اپنی عزت کا خیال کیا نا اپنے والدین کو کسی قابل گردانا اور وہ کچھ اول فول اور ہذیان بکا کہ حاسدین کی تو عید ہوگئی، لیکن اپنے بھی بعض چاہنے والے اور کچھ بہت قریب لوگ ہکا بکا رہ گئے۔

عامر لیاقت نے یہ بھی کہا کہ میرا قصور یہ تھا کہ میں نے ان کے گھر کی مدد کی جس طرح 921 خاندانوں کی گزشتہ کئی برسوں سے مدد ہورہی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >