مائرہ کو کرائے کے قاتلوں کے ذریعے باقاعدہ منصوبہ بندی سے قتل کرائے جانے کا انکشاف

مائرہ ذوالفقار کیس میں پیش رفت،کرائے کے ملزمان سے قتل کروانے کا انکشاف

پاکستانی نژاد برطانوی لڑکی مائرہ ذوالفقار قتل کیس میں اہم پیش رفت سامنے آگئی، نئی تحقیقات کے مطابق مائرہ ذوالفقار کو باقاعدہ منصوبہ بندی کرکے کرائے کےقاتلوں کے ذریعے قتل کروایا گیا ہے، پولیس قاتلوں تک پہنچنے کیلئے کوششیں کررہی ہے۔

لاہور کے علاقے ڈیفنس میں قتل ہونے والی پاکستانی نژاد برطانوی لڑکی مائرہ ذوالفقار کے قتل سے متعلق پولیس نے بھی منصوبی بندی کے تحت کرائے کے قاتل سے قتل کروانے کی تصدیق کردی۔

قتل کے وقت ملزم ظاہر جدون اسلام آباد جبکہ سعد بٹ جوہر ٹاؤن میں تھا اور سی سی ٹی وی فوٹیجز سے ملزمان کی ڈیفنس میں موجود نہ ہونےکی تصدیق ہوئی،مائرہ ذوالفقار ظاہر جدون سے شادی سے انکار کر چکی تھی جبکہ اشتہاری ظاہر جدون مائرہ کی دوست کو بھی جنسی ہراساں کرچکا ہے۔

گذشتہ روز مائرہ قتل کیس میں 18 روز بعد بھی کوئی پیش رفت نہ ہونے پر آئی جی پنجاب نے سی سی پی او سے ریکارڈ طلب کر لیا تھا،مقتولہ کے والد ذوالفقار علی کیجانب سے بھی ملزمان کی عدم گرفتاری پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے الزام عائد کیا گیا تھا کہ ملزمان کو بلا کر ان سے بیان لیکرچھوڑدیاجاتاہے۔

مائرہ کے والد کا کہنا تھا کہ میری بیٹی نانی کے پاس جاناچاہتی تھی سجل نے روک لیا، سجل سے پوچھاجائے کیوں روکا اورآخری وقت تک سجل ساتھ تھی، ذوالفقار علی نے مطالبہ کیا تھا کہ میری مددکی جائے اور میری بیٹی کےقاتلوں کوگرفتار کیا جائے،دو روز قبل ماہرہ ذوالفقار کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ مائرہ کو منہ اور گردن پر گولی مار کر قتل کیا گیا تاہم زیادتی کے شواہد نہیں ملے۔

  • Women should be careful in Pakistan. Please stay away from these love illusions.
    Also if truly speaking, harassment is real and really annoying.

    As a society, people on roads must start discouraging disrespect towards women like in Iran or KSA.

  • Zahir Jadoon, the main suspect, seems an influential. That’s why he is still at large. To be influential in Pakistan, you don’t have to be son of a politician (example: Shahrukh Jatoi). You can avoid the punishment ( or at least, the major punishment) if you are son of a top judge, General/Brigadier, top bureaucrat including police officer, or a busines tycoon ( like Malik Riaz). In all these cases, either police wouldn’t arrest the real culprit, or if the real culprit is arrested, police will file weak case against him so that Court gives him minimum punishment.

    Aik Nahin kaee Pakistan.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >