توا آئس کریم کی لوگوں میں پذیرائی، یہ آئس کریم توے پر کیسے بنتی ہے؟

توے پر انڈا، پراٹھا، روٹی، کٹاکٹ اور دیگر کئی چیزیں پکتی تو آپ نے دیکھی ہوں گی مگر اب توے پر خاص مشین کی مدد سے آئسکریم تیار کی جاتی ہے۔

اس آئسکریم کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں روایتی ونیلا، ٹوٹی فروٹی اور چاکلیٹ فلیور کے علاوہ بھی کئی فلیورز دستیاب ہوتے ہیں۔ مثلاً آپ دکاندار کو اپنی من پسند کھانے کی چیز بتائیں جس میں کوئی بسکٹ، کوئی چاکلیٹ حتیٰ کے فروٹ وغیرہ کا بھی کہہ دیں تو اسی فلیور میں آپ کے لیے آئسکریم کے رول تیار ہو جائیں گے۔

اس آئسکریم کی دکانیں لاہور، کراچی، فیصل آباد، راولپنڈی، گوجرانوالہ و دیگر کئی شہروں میں موجود ہیں جہاں خریدنے والوں کا تانتا بندھا نظر آتا ہے۔ اس میں جاذب نظر اور اپنی جانب لبھانے والی چیز اس کی آواز ہے جسے دیکھنے میں یوں لگتا ہے کہ کوئی روایتی پکوان تیار ہو رہا ہے مگر جب ٹھنڈی ٹھار آئسکریم ہاتھ میں آتی ہے تو دیکھنے والے حیران رہ جاتے ہیں۔

راولپنڈی کے ٹیپو روڈ پر توا آئسکریم بیچنے والے ایک دکاندار کا کہنا ہے کہ اسے یہ خیال انٹرنیٹ پر ویڈیوز دیکھ کر آیا جس کے بعد اس نے مشین منگوائی اور یہ کاروبار شروع کیا، اور اب وہ یہاں گاہکوں کی فرمائش پر من پسند آئسکریم بنا کر دیتا ہے۔

دکاندار کے مطابق یہ مشین مائنس 40 تک ڈگری سینٹی گریڈ تک جاتا ہے۔ اس پورے توے پربرف پھیل جاتی ہے اور نیچے تانبے کی تاریں اور کمپریسر لگا ہوتا ہے۔

دکاندار کے مطابق ایک کپ کو بنانے کیلئے 5 منٹ تک کا وقت لگتاہے۔

تواآئس کریم کا ٹرینڈ لاہور میں 5 سال قبل دیکھنے میں آیا ، جس نے لوگوں کو اپنی طرف ٹکاٹک کی آواز کی وجہ سے متوجہ کیا، اسکے بعد لاہور میں توا آئس کریم کی متعدد شاپس بن گئی ہیں جہاں توا آئس کریم مختلف قیمتوں اور من پسند فلیورز پر دستیاب ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>