مودی کو لینے کے دینے پڑگئے۔۔۔ ڈھائی لاکھ سیاحوں کا تاج محل کا دورہ منسوخ

Taj Mehal
ملک گیر احتجاج اور پر تشدد مظاہرے، لاکھوں‌ غیر ملکی سیاح بھارت کو غیر محفوظ سمجھنے لگے۔۔ مودی سرکارکو شہریت کے متنازع قانون میں ترمیم اس قدر مہنگی پڑ گئی کہ ایک طرف بھارتی معیشت کا بھٹہ بیٹھنے لگا تو دوسری طرف غیر ملکی سیاحوں نے بھی بھارت آنا چھوڑ دیا ہے۔

پچھلےدو ہفتوں میں ڈھائی لاکھ سیاحوں نے تاج محل کا دورہ منسوخ کیا۔ ملک گیر احتجاج اور انٹرنیٹ کی بندش نے ملکی اور غیرملکی سیاحوں کو خوف زدہ کر دیا۔۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ 15 روز کے دوران دو لاکھ ملکی و غیر ملکی سیاحوں نے تاج محل کا دورہ منسوخ یا ملتوی کیا جس کی وجہ سے سیاحت کے شعبے کو نقصان اٹھانا پڑا۔

تاج محل کے قریب واقع اسپیشل ٹورسٹ پولیس اسٹیشن کے آفیسر دنیش کمار نے تصدیق کی کہ رواں سال دسمبر میں سیاحوں کی آمد میں 60 فیصد کمی ہوئی ۔۔ پولیس کا کہنا ہے کہ غیرملکی سیاح پولیس ہیلپ لائن پر کال کر کے معلومات لیتے ہیں اور یقین دہانی کے باوجود بھی وہ اس طرف نہیں آتے

واضح رہے کہ بابری مسجد کے فیصلے کے بعد ہندو انتہاپسندوں نے تاج محل سے متعلق بھی شوشے چھوڑنا شروع کردیئے تھے اور یہ دعوے کرنا شروع کردئیے تھے کہ یہاں بھی مندر تھا جسے گرا کر تاج محل بنایا گیا


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>