افغانستان طیارہ حادثہ، جنرل سلیمانی کا قاتل امریکی جنرل ہلاک

Russian Media Plane

افغانستان طیارہ حادثہ، جنرل سلیمانی کا قاتل امریکی جنرل ہلاک،

روسی انٹیلی جنس ایجنسی نے دعوی کیا ہے کہ گزشتہ روز افغانستان میں گرنے والے طیارے میں امریکی انٹیلی جنس کے سربراہ مائیکل ڈی آندریا ہلاک ہو گئے ہیں

تفصیلات کے مطابق روسی انٹیلی جنس نےتصدیق کی ہےکہ گزشتہ روز افغانستان میں طالبان کی جانب سے گرائے جانےوالے جہازمیں ایرانی پاسدارانِ انقلاب کے سربراہ کو قتل کرنے والے امریکی انٹیلی جنس کے سربراہ ’’مائیکل ڈی آندریاہلاک ہوگئے ہیں ۔

روسی انٹیلی جنس ذرائع کامزیدکہنا تھا کہ تباہ ہونےوالا طیارے کی کمانڈامریکی انٹیلی جنس کےسربراہ مائیکل ڈی ’آندریا کررہے تھے۔

مائیکل ڈی آندریا کے قتل سے بھی بڑا نقصان امریکی انتظامیہ کو یہ پہنچا کہ انکا جدید ترین جاسوسی آلات سے لیس طیارہ نہ صرف مار گرایا گیا بلکہ اب اسکا ملبہ بھی افغان طالبان کے قبضہ میں ہے اور یوں مریکہ کا سب سے جدید جاسوسی پلیٹ فارم تمام ترجدید ترین سازوسامان اور دستاویزات والاموبائل کمانڈسینٹرطالبان کے پاس ہے ۔

گزشتہ روز ابتدائی طورپرکہا گیاتھا کہ یہ طیارہ افغان ایئرلائن آریانا کاہےلیکن کمپنی نے ان افواہوں کومستردکرتےہوئےکہا تھا کہ طیارہ ان کا نہیں ہے۔

تاہم ،میں پینٹاگون نےبھی افغانستان میں فوجی طیارہ گرکر تباہ ہونےکی تصدیق کردی ہے۔

فوجی طیارےکی تباہی کی تصدیق کرتےہوئےامریکی فوجی حکام کاکہنا ہے کہ فوجی طیارہ افغان صوبےغزنی میں گرکرتباہ ہوا۔

ہلاک ہونےوالےامریکی انٹیلی جنس کےسربراہ آیت اللہ مائیک کےنام سے بھی مشہورتھے، ڈینڈریاخطے میں سی آئی اے انٹیلی جنس کی سب سے نمایاں شخصیت ہیں۔

2017کےبعد سے ، ڈی ’آندریا نے مشرق وسطی میں سی آئی اے کی جانب سے مختلف کاروائیوں کی سربراہی کی ہے جن میں سب سےاہم ایرانی پاسداران ِ انقلاب کی قدس فورس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی کاقتل اور 300 عراقی مظاہرین کاقتل شامل ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>