دو پاکستانی طالبات نے کرونا وائرس سے متاثرہ شہر ووہان کی منظر کشی کردی

دو پاکستانی طالبات نے مہلک مرض کرونا سے متاثرہ شہر ووہان کی منظر کشی کی ہے۔ دونوں طالبات کئی روز بعد خریداری کے لیے گھر سے باہر نکلیں۔طالبات کا کہنا تھا کہ کرونا کی وجہ سے شہر کی سڑکیں ویران ہیں۔ پبلک ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے برابر ہے۔

https://www.facebook.com/aljazeera/videos/171039470823645/?v=171039470823645

طالبات کا مزید کہنا تھا کہ امید ہے کہ جلد اس شہر کو کرونا جیسے جان لیوا وائرس سے نجات ملے گی۔۔شہر کی رونقیں بحال ہوں گی۔ اتنے دنوں سے کمروں میں محصور تھے۔۔آج باہر نکل کر بہت اچھا لگ رہا ہے۔

باہر کھڑے افراد سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ کام سے فراغت کے بعد چینی افراد اپنے اپنے موبائل فون میں مگن ہوجاتے ہیں۔۔طالبات نے ووہان میں پھلوں کی دکان بھی دکھائی۔۔جبکہ دونوں ایک اسٹور بھی گئیں۔۔جہاں روزمرہ کے استعمال کی اشیا خریدیں۔۔جس کے بعد دونوں طالبات اپنے روم میں واپس آگئیں۔

شہر ووہان میں اس وقت 500 پاکستانی طلبہ موجود ہیں جب کہ کرونا وائرس کی وجہ سے امریکہ، ملائیشیا، آسٹریلیا، ترکی اور بھارت سمیت دیگر ممالک نے اپنے اپنے طلبہ کو خصوصی طیارے بھیج کر واپس بلوا لیا ہے لیکن حکومت پاکستان کی جانب سے تاحال کوئی مدد نہیں کی گئی ہے۔۔

ووہان میں سڑکیں، ریلوے اسٹیشن، ہوائی اڈے اور ٹیکسی اسٹینڈ سمیت پورا شہر بند ہے۔ووہان میں 4 پاکستانی طلبہ میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے تاہم علاج کے بعد ان کی صحت میں بہتری آئی ہے

  • بہت خوبصورت شہر سڑکیں اور بلڈنگیں ہیں لگتا ہے چین اب امریکہ ہی بن چکا ہے
    کھاو پیو خوب جان بناو اور ہوسکے تو دو چینی لڑکوں کو مسلمان کرکے گھر بھی بسا لینا مجھے تو انڈینز پر ترس آتا ہے جنکو جلد از جلد سپر پاور بننا تھا ، ان کو چاہئے کہ چین کا معیار زندگی دیکھیں اور ابھی سپر پاور بننے کی بجاے عوام کو ٹائلٹس ہی بنا دیں چارے انڈین ریلوے لائین پر ابھی تک گند کرتے ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >