ایرانی حملہ سے متاثرہ امریکی فوجی اہلکاروں کی تعداد 109 ہو گئی

Irani Soldiers

ایرانی حملہ، متاثرہ امریکی فوجی اہلکاروں کی تعداد 109 ہو گئی

امریکی فوجی اہلکاروں کو دماغی چوٹیں آئی، وہ سر درد، چکر آنا، متلی ہونا اور روشنی سے حساسیت کا شکار ہوگئے ہیں

تفصیلات کے مطابق امریکی وزارت دفاع کے صدر دفتر پینٹاگون کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل تھامس کیمبل نے اپنے حالیہ بیان میں اعتراف کیا ہے کہ گزشتہ ماہ کے آغاز میں عراق کے عین الاسد فوجی اڈے پر ایران کے میزائل حملوں سے متاثر ہونے والے امریکی فوجیوں کی تعداد 64 سے بڑھ کر 109 ہوگئی ہے۔

کرنل تھامس کر مطابق ان اہلکاروں کو شدید دماغی چوٹیں آئی ہیں اور وہ سر درد، چکر آنا، متلی ہونا اور روشنی سے حساسیت کا شکار ہوگئے ہیں۔ جن میں سے اکثر کا علاج ہوچکا ہے تاہم کئی نئے مریض بھی سامنے آئے ہیں۔ 109 میں 76 کو علاج کے بعد واپس ملازمتوں پر بھیج دیا گیا ہے۔

فوجی ترجمان نے مزید بتایا کہ 18 امریکی فوجیوں کو علاج کے لیے جرمنی اور ایک کو کویت بھی بھیجا گیا جب کہ 31 اہلکاروں کا علاج عراق میں ہوا اور وہ ڈیوٹی پر واپس آگئے ہیں۔

واضح رہے کہ جنرل سلیمانی کی ہلاکت کے بعد پیدا ہونے والی کشیدگی میں ایران نے امریکی بیس پر جوابی حملہ کیا تھا، حملے کے بعد 8 جنوری کو صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایرانی حملے پر پالیسی بیان میں امریکی فوجیوں کے زخمی یا ہلاک ہونے کی تردید کی تھی۔

لیکن بعد میں پینٹاگون نے 31 اہلکاروں کے زخمی ہونے کا اعتراف کرلیا تھا اس کے بعد یہ تعداد 50 بتائی گئی تھی، بعد ازاں کہا گیا کہ تعداد 64 ہے اور اب ایک بار پھر تعداد میں اضافہ بتایا گیا ہے۔

  • جھوٹ ہے، امریکی فوجی ہر ماہ خودکشیاں کرتے ہیں اس بات سے لاتعلق کہان پر کوئی بیرونی حملہ ہوا ہو۔

    یہ بس ڈھونگ ہے جسے ایران کا نام دیا جا رہا ہے۔


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >