ویانا میں اقوام متحدہ کے دفتر میں کورونا وائرس کا مشتبہ کیس

جان لیوا کورونا وائرس آسٹریا بھی پہنچ گیا۔۔ آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں کورونا وائرس کا پہلا  مشتبہ کیس سامنے  آگیا ہے۔ متاثرہ شخص ویانا میں اقوام متحدہ کے دفتر میں  کام کرتا ہے،

آسٹرین اسپتال حکام کا کہنا ہے کہ مشتبہ شخص کو کورونا وائرس نہیں لیکن اس وائرس کے قریب ہے، صورتحال کا بغور جائزہ لے رہے ہیں۔۔ مشتبہ شخص کے مزید ٹیسٹ کئے جارہے ہیں۔۔

ویانا میں اقوام متحدہ کے دفتر میں  اس وقت ایک سو پچیس ممالک کے پانچ ہزار ملازمین کام کررہے ہیں ۔ جبکہ ویانا کی چھتیس آرگنائزیشن میں دنیا بھر کے ممالک کے لوگ کام کرتے ہیں۔

دنیا بھر میں کورونا وائرس کی دہشت پھیلی ہوئی ہے، چین میں کورونا وائرس سے مزید انتیس افراد ہلاک ہوگئے۔۔ اموات اٹھائیس سو سے تجاوز کرگئیں ہیں۔۔  

جبکہ چار سو تینتیس نئے کیس رپورٹ ہوچکے ہیں۔۔ دنیا بھر میں متاثرین کی تعداد اکیاسی ہزار سات سو تک جا پہنچی،، جنوبی کوریا میں کورونا وائرس سے ہلاکتیں تیرہ ہوگئیں۔۔

تین سو چونتیس نئے کیس رپورٹ ہوئے تو جنوبی کوریا نے امریکا کے ساتھ فوجی مشقیں ملتوی کردی گئیں۔۔ رومانیہ،جارجیا اور برزایل میں ایک ایک کیس رپورٹ ہوا،ہانگ کانگ،جاپان اور اٹلی میں کیسز میں اضافہ ہوگیا۔۔

عراق میں تعلیمی اداروں، سینما گھروں سمیت تمام عوامی مقامات سات مارچ تک بند رہیں گے۔ شہریوں کی متاثرہ ممالک جانے پرپابندی عائد کردی گئی۔ان ممالک میں سیاحتی شعبہ بھی شدید متاثر ہورہاہے۔۔

سعودی عرب نے کورونا وائرس سے متاثرہ ملکوں کے عمرہ زائرین پر عارضی پابندی عائد کردی ہے، پابندی والے ملکوں میں پاکستان بھی شامل ہے، خلیجی ممالک کے شہریوں کا داخلہ بھی روک دیا گیا ہے،

ایسے تمام افراد کا داخلہ بھی بند کردیا گیا ہے جو گزشتہ پندرہ دن میں چین کا سفر کر چکے ہیں


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>