کرونا وائرس :ایرانی رکن پارلیمنٹ جاں بحق، ایرانی نائب صدر کی حالت تشویشناک

کرونا وائرس کی وبا ایرانی رکن پارلیمنٹ کو نگل گئی، نائب صدر کی حالت تشویش ناک

ایرانی حکام نے رکن پارلیمنٹ کی صحت یابی کا اعلان کیا تھا، ملک میں خوف ہراس

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس ایران میں ایک اور جان نگل گیا، وائرس سے جان بحق ہونے والے محمد رمضانی کوئی عام شہری نہیں بلکہ رکن پارلیمنٹ تھے، اور یوں ملک میں ہلاکتوں کی تعداد 43 ہو گئی ہے جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 593 ہو گئی ہے۔

عرب نشریاتی ادارے ’العربیہ‘ کے مطابق نو منتخب رکن پارلیمنٹ محمد علی رمضانی گزشتہ روز نزلہ اور سانس لینے میں دشواری کے باعث چل بسے۔

رپورٹ کے مطابق محمد علی رمضانی کورونا وائرس سے متاثر تھے تاہم ایرانی عہدیداروں نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ وائرس سے صحت یاب ہوچکے تھے۔

اس سے قبل ایران کے ایک اور رکن پارلیمنٹ محمود صادقی نے ٹوئٹ میں بتایا تھا کہ ‘مجھ میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے اور مجھے امید نہیں کہ زیادہ عرصہ زندہ رہ سکوں’۔

دوسری طرف حکام یہ بات ماننے کو تیار نہیں کہ رمضانی کی موت کرونا وائرس سے ہوئی ہے، حکام کا کہنا تھا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس سے متاثرہ 9 افراد ہلاک ہوئے ہیں تاہم ہلاک ہونے والے رکن پارلیمنٹ وائرس سے متاثرہ نہیں تھے۔

برطانوی اخبار کے مطابق ایران سے متعلق خبریں ہیں کہ وہاں پر کورونا وائرس کی وجہ سے 200 سے زائد ہلاکتیں ہوئی ہیں تاہم ایرانی حکام ہلاکتوں کی تعداد کو چھپا رہے ہیں

یاد رہے کہ رکن پارلیمنٹ کی ہلاکت کے بعد ملک میں خوف پھیل گیا جب کہ وائرس سے متاثرہ دیگر 4 ارکان پارلیمنٹ سمیت نائب وزیر صحت اور نائب صدر کی حالت بھی تشویش ناک بتائی جا رہی ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>