فرانس میں کرونا وائرس کا خطرہ برقرار، ایک دن میں 7578 کیسز ریکارڈ

اسپین اور اٹلی کے طرح یورپی ملک فرانس میں بھی کرونا وائرس کا خطرہ تیزی سے بڑھ رہاہے۔۔
فرانس میں ایک دن میں مزید سات ہزار پانچ سو اٹھتر افراد کے کرونا ٹیسٹ مثبت آئے ہیں۔۔ متاثرین کی تعداد باون ہزار ایک سو اٹھائیس ہے۔۔ جبکہ ہلاکتیں تین ہزار پانچ سو تئیس ہیں۔فرانس کے ڈائریکٹر جنرل صحت  کے مطابق  کرونا سے گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران پانچ سو افراد ہلاک ہوئے ہیں۔۔

ڈائریکٹر جنرل صحت نے بتایا کہ متاثرہ ساڑھے پانچ ہزار سے زائد افراد کی حالت تشویشناک ہے۔۔ نو ہزار چار سو چوالیس افراد نے وائرس کو شکست دے دی ہے۔۔ صحتیاب ہوکر گھر چلے گئے ہیں۔۔

امریکا کورونا وائرس سے متاثر ترین ملک بن گیا ہے۔۔ نیویارک میں ایک ہی دن میں اکتالیس ہزار افراد کے ٹیسٹ مثبت آگئے۔۔امریکی ماہرین نے کورونا وائرس سے امریکا میں ایک سے دو لاکھ اموات کا امکان ظاہر کردیا۔وائٹ ہاؤس کی کورونا وائرس ٹاس فورس کی سربراہ ڈیبرا بریکس کے مطابق یہ تعداد اتنی زیادہ اس لیے ہو سکتی ہے

کیونکہ کچھ لوگ اب بھی وائرس سے بچاؤ کے تریقوں پر عمل نہیں کر رہے۔ صدر ٹرمپ نے دو ہفتے خطرناک ترین قرار دے دیے  دوسری جانب روسی طیارہ طبی امداد لے کر امریکا پہنچ گیا ہے۔۔

کورونا نے اٹلی میں مزید آٹھ سو سینتیس جانیں لے لیں۔۔۔ترکی میں کورونا سے دو سو چودہ افراد جاں بحق۔۔ متاثرین کی تعداد تیرہ ہزار پانچ سو تیرہ ہوگئی۔۔ صدر طیب اردوان نے کورونا فنڈ کا اعلان کردیا۔۔ اپنی سات ماہ کی تنخواہ جمع کرا دی۔۔  "ہم ایک دوسرے کے لیے کافی ہیں” کے نام سے قومی یکجہتی مہم کا آغاز بھی کردیا۔

چین کورونا سے متاثرہ ممالک کی فہرست میں چوتھے نمبر پر چلا گیا ہے۔ چین میں چھتیس نئے کیسز رپورٹ جبکہ ہوبئی میں صرف ایک کیس سامنے آیا ہے، چین میں متاثرین کی تعداد اکیاسی ہزار پانچ سو اٹھارہ اور ہلاکتیں تین ہزار تین سو پانچ ہے۔

بھارت میں کورونا وائرس کے باعث  لاک ڈاؤن ایک بڑے انسانی بحران کو جنم دے رہا ہے۔۔۔ شہروں سے گاؤں کی جانب ہجرت سے وبا پھیلنے کے خطرات میں اضافہ ہوگیا۔۔بھارت میں پینتیس افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور تیرہ سو ستانوے افراد متاثر ہیں۔ بھارتی کیمپوں میں مقیم روہنگیا مسلمان بھی کورونا وائرس کے باعث پریشان ہیں ۔۔

کہتے ہیں کورونا وائرس سے پہلے ہمیں بھوک ماردے گی۔۔ ایران میں کورونا سے دوہزار آٹھ سو نواسی افراد ہلاک اور چوالیس ہزار سے زائد  متاثر ہوچکے ہیں۔۔دنیا بھر میں کورونا وائرس کے وار جاری ہیں۔۔ دنیابھر میں  ہلاکتیں  بیالیس ہزار ایک سو اٹھاون ہوگئیں ہیں ۔متاثرین کی تعداد آٹھ لاکھ اٹھاون ہزار آٹھ سو بانوے ہوگئی۔۔ایک لاکھ اٹھتر ہزار سو افراد  صحتیاب ہوچکے ہیں۔۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس نے کہا ہے کہ  دنیا اس وقت دوسری جنگ عظیم کے بعد سب سے بڑے امتحان سے گزر رہی ہے، عالمی وبا کورونا کسی امتحان سے کم نہیں ہے، یہ بحران تعاون مانگ رہاہے،

وائرس وبائی بیماری دوسری جنگ عظیم کے بعد بدترین عالمی بحران ہے۔ مضبوط اور زیادہ موثر جواب  یکجہتی سے ہی ممکن ہے  اگر سب اکٹھے ہوں اور اگر ہم سیاسی کھیل بھول جاتے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ یہ انسانیت ہی خطرے کی زد میں ہے ۔۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More