کرونا وائرس امریکا میں قابو سے باہر ، امریکی صدر کی عالمی ادارہ صحت کو دھمکیاں

امریکا میں کرونا کے تیزی سے وار جاری ہیں.جس پر قابو پانا امریکا کیلئے مشکل ہوتا جارہاہے.ایسے میں جب دنیا ایک دوسرے کی اس مشکل وقت میں امداد کررہی ہے وہیں امریکی صدر ڈونلد ٹرمپ بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئے ہیں. دھمکیوں پر اتر آئے ہیں.

ڈونلڈ ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت پر چین کی جانبداری کا الزام لگاتے ہوئے فنڈز روکنے کی دھمکی دے دی ہے.ڈونلڈ ٹرمپ نے ڈبلیو ایچ او پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ آئندہ اس ادارے کے فنڈز روکنے پر غور کررہے ہیں. جبکہ اس سے پہلے وہ فنڈز کو نصف کرنے کا بھی سوچ رہے تھے.

ڈونلڈ ٹرمپ نے الزام لگایاکہ عالمی ادارہ صحت پر کرونا وائرس کے پھیلاؤ روکنے کےلیے فیصلوں اور عملی اقدامات میں بہت تاخیر کی جس کی وجہ سے یہ عالمی وبا بنا اور صورتحال مزید سنگین ہوگئی ہے. ٹرمپ نے کرونا وائرس کو ’’چائنا وائرس‘‘ قرار دے کر چین اور عالمی ادارہ صحت پر پہلے بھی تنقید کی تھی.

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ چینی صدر کو اس مشکل وقت میں امریکا کی مدد کرنی چاہئے جبکہ اس سے قبل ٹرمپ نے بھارت کے انکار سے قبل ہی ہائیدروکلورین نہ دینے کی صورت میں سنگین کارروائی کا کہہ دیا تھا. جبکہ بھارت ٹرمپ کی درخواست کے بعد ہائیڈروکلورین اور پیراسیٹامول سمیت چودہ ادویات کی برآمد پر پابندی ہٹانے کا فیصلہ کر چکاہے.

امریکا میں مہلک کرونا وائرس سے چار لاکھ پانچ سو اننچاس افراد متاثر ہوچکے ہیں جبکہ تقریباً تیرا ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں.بائیس پاکستانی نیویارک میں اس مہلک وائرس سے زندگی کی بازی ہار چکے ہیں.نیویارک اس وقت سب سے زیارہ کرونا وائرس سے متاثر ہے.

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More