شادی میں تاخیر پر جوڑے نے خودکشی کر لی

کورونا کے باعث دنیا کے کئی ممالک میں لاک ڈاؤن کیا گیا اس دوران گھروں میں تشدد اور لڑائی جھگڑے کے واقعات میں اضافہ سامنے آیا اورکئی ممالک میں تو طلاق کی شرح میں بھی اضافہ ہوا۔

کئی جگہوں سے اپنی نوعیت کے منفرد واقعات سننے کو ملے مگر بھارت کی ریاست تلنگانا میں جہاں 22 مارچ سے لاک ڈاؤن جاری ہے وہاں 22 سالہ پنڈورگنیش اور20 سال کی سوام سیٹھبائی کی شادی طے ہوئی تھی جوکہ مسلسل لاک ڈاؤن کے باعث التوا کا شکار تھی۔ان دونوں کی لاشیں گھر سے کچھ فاصلے پرکھیتوں سے ملیں۔

پولیس ابھی تک موت کی وجہ نہیں بتا سکی البتہ لاشوں کو پوسٹمارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے،پولیس کا کہنا تھاکہ دونوں خاندانوں میں شادی طے تھی مگر لاک ڈاؤن کے باعث تقریب کے موخر ہونے پر جوڑا تناؤ کا شکار تھا۔

واضح رہے کہ تلنگانا میں 22 مارچ کو لاک ڈاؤن نافذ ہوا تھا جس کے باعث اس ریاست میں متعدد شادیاں منسوخ ہوگئی تھیں۔

لاک ڈاؤن کے بعد بھارت کی مختلف ریاستوں سے منفرد واقعات سامنے آئے۔ ریاست بہار کے مقامی اخبار کے مطابق پلی گنج کے رہائشی دھیرج کمار کی بیوی 22 مارچ کو لاک ڈاؤن نافذ ہونے سے قبل اسی شہر کے دوسرے علاقے دلہن بازار میں میکے چلی گئی حکومت نے لاک ڈاؤن کا اعلان کردیا تودھیرج کمان نے لاک ڈاؤن کے دوران اپنی بیوی کے میکے میں پھنس جانے پر دوسری شادی کرلی تھی۔

بھارت کی ریاست بہار میں مسلسل لاک ڈاؤن میں تنہا رہنے کی وجہ سے ایک شخص نے اپنی سابق محبوبہ سے ہی شادی کرلی۔

تلنگانا ہی کے 28 سالہ نجف نقوی اور کرناٹکا کی 25 سالہ فریا سلطان
نے لاک ڈاؤن سے شادی کی تقریب موخر ہونے پر آن لائن شادی کرلی۔

یہاں یہ بھی بتانا ضروری ہے کہ بھارت میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو محدود کرنے کے لیے حکومت نے یکم مئی سے ملک گیر لاک ڈاؤن میں 2 ہفتوں کی توسیع کر دی ہے،البتہ کچھ علاقوں میں لاک ڈاؤن کو نرم بھی کیا گیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >