کورونا وائرس کی ویکسین شاید سودمند ثابت نہ ہو، برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن

 

برطانوی وزیر اعظم نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ ممکن ہے کرونا وائرسں کی ویکسین بن ہی نہ سکے یا اگر بنے بھی تو اس فائدہ مند نہ ہو، برطانوی اخبار کو انٹرویو کے دوران ان کا کہنا تھا کہ یہ وائرس کب ختم ہو گا کچھ نہیں کہا جا سکتا.

انہوں نے کہا کہ ہمیں کورونا وائرس کو قابو کرنے کے نئے طریقے تلاش کرنا ہوں گے کیونکہ ان کے مطابق ویکسین بننے کے بعد بھی شاید اس قدر سود مند ثابت نہ ہو جیسا کہ خیال کیا جا رہا ہے.

ان کا کہنا تھا کہ متاثرہ لوگوں سے وابستہ لوگوں کو قرنطینہ کرنے کا طریقہ سب سے بہتر ہے. بورس جانسن نے کہا کہ ہمیں سمجھنا چاہیے کہ پہلا قدم اٹھانا کبھی بھی آسان نہیں ہوتا مگر لوگوں کو بیماری کی روک تھام کیلئے گھروں میں رہنا سیکھنا ہوگا.

برطانوی حکومت خود ویکسینیشن کی تیاری پر لاکھوں ڈالر خرچ کر رہی ہے اور اس ضمن میں مزید سرمایہ لگا رہی ہے مگر حکومت کا کہنا ہے تھوڑا محتاط رہ کر لوگ اس بیماری سے خود کو اور دوسروں کو بھی بچا سکتے ہیں.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >