لداخ : چینی افواج نے ٹھکائی کے بعد بھارتی فوجیوں کو بھارت کے حوالے کردیا

https://www.youtube.com/watch?v=1AO1Sy2KnZk

چینی افواج کی بھارتی فورسز سے لداخ میں جھڑپ: لداخ کے علاقے میں چین اور بھارت کی افواج میں جھڑپ کے بعد بھارت کی ایک پیٹرول پارٹی چینی افواج کے ہتھے چڑھ گئی جسے زیرحراست لینے کے بعد بھارتی حکام کے حوالے کردیا گیا۔

دونوں ملکوں کے درمیان بارڈر لائن آف ایکچوئل کنٹرول پر لداخ کے مقام پر جھڑ پ ہوئی جس میں چینی افواج نے بھارت کے ایک فوجی دستے کوئی حراست میں لے لیا جسے بعد میں رہا بھی کردیا گیا،تاہم دونوں جانب کے کمانڈرز کے درمیان بارڈر میٹنگ کے بعد صورتحال معمول پر آگئی۔

بھارتی فوج کی جانب سے وزیراعظم آفس کو معاملے پر بریفنگ دی گئی ایک سینئر بیوکریٹ کے مطابق بریفنگ میں بتایا گیا کہ صورتحال اس وقت گھمبیر ہوگئی جب بارڈر پر دونوں افواج کے درمیان جھڑپ ہوئی او ر اس جھڑپ میں بھارتی فوج کے کچھ جوان چینی افواج کے قبضے میں آگئے تاہم انہیں بعد میں رہا کردیا گیا، چینی افواج نے جوانوں کو واپس بھیجتے ہوئے قبضے میں لیے گیا اسلحہ بھی واپس کردیا۔

بھارتی فوج کی طرف سے حکومت کو دی گئی بریفنگ میں مزید کہا گیا کہ چینی افواج سرحد پار کرکے بھارتی حدود میں کافی اندر تک آنے میں کامیاب ہوگئے تھے، انہوں نے پینگونگ نہر میں موٹر بوٹس کے ذریعے کافی دیر تک پیٹرولنگ بھی کی، یہ ایک شدید قسم کا جھٹکا تھا، لیکن اب صورتحال معمول پر آرہی ہے مگر ابھی سب ٹھیک نہیں ہوا۔

دوسری جانب بھارتی فوج نے معاملے کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمارا کوئی ایک جوان بھی چینی حراست میں نہیں آیا، ہم سختی سے اس خبر کی تردید کرتے ہیں، ایسی خبریں ہمارے ملکی مفاد کو ٹھیس پہنچانے کیلئے میڈیا پر چلوائی جاتی ہیں۔

ذرائع کے مطابق قومی سلامتی کے مشیر اجیت دوول روزانہ کی بنیاد پر معاملے پر بریفنگ لے رہے ہیں، حالیہ جھڑپ کے بعد بھارت نے اپنی سرحد پر فوج کی تعداد میں اضافے کا فیصلہ کیا ہے جس کے بعد بھارت نے گلوان ریجن میں اپنی نفری کو دوبارہ تعینات کردیا ہے۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More