افغان حکومت نے سینکڑوں افغان طالبان قیدی رہا کر دیئے

افغان حکومت نے سینکڑوں افغان طالبان قیدی رہا کر دیئے

رمضان کے بعد عید کے موقع پر پر سکون عید گزارنے کیلئے افغان حکومت کے مطالبے پر افغان طالبان نے3 دن کیلئے جنگ بندی کی جس کے نتیجے میں افغان حکومت نے 900 کے قریب افغان طالبان کے قیدی رہا کر دیئے۔

طالبان قیدیوں کو افغان امریکا امن مذاکرات کے نتیجے میں رہا کیا گیا ہے۔رہاکیے گئے قیدیوں کو بٹگرام جیل سے لایا گیا۔رہائی پانے والے قیدیوں کا کہنا تھا کہ رہائی سے متعلق ان کو کوئی خبر نہیں تھی باہر نکالنے پر ایک رپورٹر نے ان کو بتایا کہ ان سب کو رہا کیا جا رہا ہے۔

رہائی پانے والے قیدیوں سے معاہدے پر دستخط کرائے جا رہے ہیں کہ وہ دوبارہ طالبان کے ساتھ مل کر ریاست کے خلاف محاذ آرائی نہیں کریں گے۔ رہائی پانے والے طالبان قیدیوں کا بھی یہی کہنا ہے کہ وہ اب اپنی باقی کی زندگی امن معاہدے کے تحت عام لوگوں کی طرح ریاست کے قانون کی پاسداری میں گزاریں گے۔

افغان حکومت نے امریکا افغان امن مذاکرات کے تحت قیدیوں کو آئندہ مذاکرات کی میز پر لانے کیلئے رہا کیا ہے۔

افغان سیکیورٹی فورسز کے ترجمان جاوید فیصل کا کہنا ہے کہ یہ جنگ بندی کا معاہدہ اس لیے کیا گیا کیونکہ افغانستان کے لوگ اب آرام چاہتے ہیں، ہر افغان شہری پر سکون زندگی گزارنا چاہتا ہے۔ اس معاہدے کے تحت آنے والے وقت میں امن مذاکرات میں مدد ملے گی۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More