حضرت عمر بن عبدالعزیز رضی اللہ تعالیٰ عنہُ کے مزار پر حملہ قبر کی بے حرمتی

شام کے صوبہ ادلب کے شمال مشرقی علاقے میں بنو امیہ سے تعلق رکھنے والے مسلمانوں کے آٹھویں خلیفہ حضرت عمر بن عبدالعزیز رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا مزار ان کی زوجہ حضرت فاطمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا اور ان کے خادم کی قبریں موجود تھیں جن پر گزشتہ روز شدت پسندوں نے حملہ کیا اور قبر سے جسد مبارک کو نکال کر ان کی بے حرمتی کی گئی۔

 

مزار کی بےحرمتی کی سوشل میڈیا پر تصاویر شیئر کرتے ہوئے صارفین نے اس افسوس ناک واقعہ پر شدید ردعمل دیا ہے اور بھرپور مذمت کی ہے۔ مزار پر رکھا سامان غائب کردیا گیا۔ میرات النعمان کے علاقہ میں دیار الشرقی گاؤں میں واقع اس جگہ پر رواں سال فروری میں حکومت اور ملیشیا کی افواج کے قبضے کے بعد اس قبرستان کو نذر آتش کیا گیا تھا۔

https://twitter.com/dead_molvi/status/1266431801565863937

ترک خبر رساں ادارے کے مطابق عمر بن عبد العزیز کی باقیات کے مقام سے متعلق کوئی معلومات سامنے نہیں آسکی عمر ابن عبد العزیز  کو ایک حکمران کی حیثیت سے مسلم دنیا میں انتہائی احترام حاصل ہے جنہوں نے آٹھویں صدی میں 7 سال کے مختصر وقت میں انصاف قائم کیا انہوں پانچویں صحیح راہنما و خلیفہ کا بھی خطاب ملا۔

بشارالاسد کے دور حکومت میں ایسا پہلی دفعہ نہیں ہوا کہ مدفون لوگوں کی قبروں کی بےحرمتی کی گئی ہو۔ فروری 2020 میں بھی ایسی ویڈیوز منظرعام پر آئیں تھیں جن میں حکومتی قوتوں اور ملیشیاؤں نے سنی علاقوں میں متعدد اپوزیشن جنگجوؤں اور کمانڈروں کی قبروں کی بے حرمتی کی تھی۔

ان ویڈیوز میں شامی فوجیوں کو لاشوں کی کھوپڑی سے کھیلتے دکھایا گیا تھا۔ مبینہ طور پر 2015 میں بھی اسی طرح کے مناظر دیکھنے میں آئے تھے جب حکومت کی فورسز نے حمص میں درجنوں قبریں نکالیں اور لاشوں کو چرا لیاتھا۔

پاکستانی علما نے بھی اس حوالے سے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے پاکستانی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ حکومتی سطح پر شامی حکومت سے رابطہ کرکے احتجاج ریکارڈ کرایا جائے بلکہ شامی حکومت سے اس واقعہ میں ملوث دہشت گردوں کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جائے۔

    Chief Minister (5k + posts)

    اس سارے واقعے میں ،شیعہ حضرات سے گزارش ہے کے اس واقعہ میں اپنے فرقے کے لوگوں کی حمایت کرنے کی بجائے حق کی بات کریں کے جس نے بھی یہ کیا الله اسکو دنیا و آخرت میں ذلیل و خوار کرے ،اسد البشر ،اچھے شیعہ لوگوں کو بھی بدنام ہی کر رہا ہے

    Prime Minister (33k + posts)

    یہ لوگ پورے شعیہ نہیں بلکہ جیسے سنیوں میں لعنتی قادیانی ہیں ویسے ہی شعیوں میں نصیریہ کے لوگ ہیں جو حضرت علیہ السّلام کے لیے خدا کا درجہ رکھتے ہیں۔ اور بشارالاسد بھی ایک نصیریہ ہے۔ یہ انتہا درجے کے انتہا پسند اور جنونی ہیں۔

    (1 posts)

    عمر ابن عبد العزیز جو پیغمبرؐ کے ساتھی اور دوسرے خلیفہ عمر ابن الخطاب کے فرزند تھے

    بھائی جس نے بھی یہ تحریر لکھی ہے اس کو اس لائن کی درستگی کرنی چاہیے۔ حضرت عمربن عبدالعزیز جس طرح نام سے ظاہر ہے حضرت عمربن الخطاب کے صاحبزادے نہیں تھے اور نہ ہی صحابی تھے آپکی پیدائش حضور پاک کے وصال کے پچاس سال بعداور حضرت عمربن الخطاب کی شہادت کے کافی سال بعد ہوئی۔

    (1 posts)

    yar ya log shia ni hain ya hamary kilaf sazish ho rahi ha ino ny paly last year hazar omar bin abdul aziz k tomb ki byhormati ki lakin kohi ni bola na shia shia lary na sunni lary pher ino ny January 2020 ma tomb ko ag lagahi pher b kush radyamal ni aya pher ab in sharpasando ny ap ki qabar aur jysam mubarik ki byhormati ki ab ham sab apas my larny lag pary hain ham shia ko badnam karny lag pary hain aur vo ider apni safahi b pash kar rahy hain k shia asa ny kar sakty hazrat umar bin abdul aziz ki respect karty hain lakin ham in ki bat son hi ni rahy.ya sab yahodi ya salebi sazish ha.ham ko apas my larany ky liya q k Pakistan aur iran apas my dost ban gy hain aur saudia aur iran b apas my ni larahi kar rahy ilta ham irtugral darama dekh kar in ky kilaf ho gy lakin ab ya hamy pher sy lara rahin hain aur ham in ki batoon ko man rahin hain paly shia hazrat sy pouch to lo k ino ny ya kia b ha ya ni.kia fahida irtugral darama dekhny ka k sazish b ab na pechan sako is my ya hi to dekaya jata ha.lakin ham pher b inki sazish my phans kar apas my larny lag pary hain.

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More