اٹلی میں کورونا وائرس اب پہلے جتنا خطرناک نہیں رہا۔ اطالوی ڈاکٹروں کا دعویٰ

اٹلی کے ڈاکٹروں نے دعویٰ کیا ہے کہ کورونا وائرس جتنا شروع میں تھا اب اتنا خطرناک اور جان لیوا نہیں رہا۔

بین الاقوامی نیوز ایجنسی رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق سان ریفائلی ہسپتال کے سربراہ ڈاکٹر البرٹو زینگریلو نے ایک ٹی وی پروگرام میں انکشاف کیا کہ یہ وائرس اب میڈیکلی اٹلی میں موجود ہی نہیں ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ دس دنوں کے ٹیسٹوں میں جو وائرل لوڈ دیکھا گیا وہ گزشتہ 1 ،2 ماہ کی نسبت نہ ہونے کے برابر ہے، حکومت کو لاک ڈاؤن کی پابندیاں ہٹانے کا سلسلہ جاری رکھنا چاہیے، وائرس کی دوسری لہر کی وارننگ غیر ضروری خوف پھیلانے کی وجہ بن رہی ہے۔

اٹلی کے ایک اور شہرجینیوا کے سان مارٹینو ہسپتال کے ڈاکٹرمیٹیو باسیٹی نے بھی اسی قسم کی گفتگو کرتے ہوئے کہ کورونا اب پہلے جتنا جان لیوا نہیں رہا، اس وائرس کی جو طاقت شروع میں تھی وہ اب بالکل کم ہوگئی ہے اور درحقیقت آج کی کووڈ 19 کی بیماری شروع میں سامنے آنے والی بیماری سے بہت مختلف ہے۔

تاہم اٹلی کے وزیرصحت ساندرا زمپاکا کہنا ہے کہ ڈاکٹروں کے دعووں سے متعلق شواہد ناکافی ہیں، شہری ابھی بھی سماجی فاصلے کو یقینی بنائیں، زیادہ افراد کے اجتماع سے گریز کیا جائے ، ہاتھوں کو بار بار دھوئیں اور ماسک پہننا نہ چھوڑیں۔
واضح ہو کہ اٹلی کورونا وائرس سے سب سےز یادہ متاثر ہونے والے ممالک میں سے ایک ہے، یہاں اس وائرس کے باعث ہونے والی کل ہلاکتوں کی تعداد33ہزارسے بھی زیادہ تھی۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More