کورونا کے شکار مسلمانوں کو زہر کے ٹیکے لگانے چاہیئں،بھارتی ہسپتال کی ڈین کی تجویز

بھارت میں مسلمانوں کو کورونا بحران کے دوران بھی اسلام و فوبیا کا شکار ہندؤں کے تعصب اور نفرت کا سامنا ہے۔

https://www.youtube.com/watch?v=rrlV1_mEK1o

نفرت اور اسلام و فوبیا کی شکا ر کانپور کے جی ایس وی ایم میڈیکل کالج کی ڈین ڈاکٹر آرتی لال چندانی کی ایک ویڈیو لیک ہوئی جس میں انہوں نے کورونا کے مسلمان مریضوں کے خلاف نفرت آمیز گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جماعتی مریضوں کیلئے حکومت ہمارے لوگوں کو خطرے میں ڈال رہی ہے میں تو کہتی ہوں ان مریضوں کو ایک ایک کرکے زہر کے انجکشن لگا دینے چاہیئں۔

ڈاکٹر آرتی میڈیا کے نمائندوں سے آف دی ریکارڈ گفتگو کررہی تھیں جسے کسی نے چھپ کر اپنے موبائل پر ریکارڈ کرلیا، ان کا کہنا تھا کہ 22 مریضوں کیلئے اتنا پیسہ خرچ کیا جارہا ہے اگر ہمیں ان مسلمان مریضوں کا علاج نہ کرنا ہو تو ہمارے پاس کورونا کا صرف ایک ہندو مریض رہ جائے گا اور اتنے وسائل جو ان مسلمانوں پر خرچ ہورہے ہیں یہ بچ جائیں گے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ میں تو کہتی ہوں انہیں ہسپتال میں داخل کرنے کے بجائے جیلوں میں ڈالنا چاہیے ، میں تو وزیر صحت اور چیف منسٹر سے بھی اپیل کرچکی ہوں کہ ان مسلمانوں کی وجہ سے پوری قوم کو خطرے میں مت ڈالیں، لیکن وہ کہتے ہیں آپ ایسی باتیں مت کریں کہیں لیک نہ ہوجائے، میرے اوپر بہت دباؤ ہے تب ہی میں ان مسلمان کورونا مریضوں کو یہاں داخل کرنے پر مجبور ہوں ورنہ میرا بس چلے تو میں ایک ایک کرکے ان سب مریضوں کو زہر کے انجکشن لگوادوں۔

    (1 posts)

    With regard to allegations that some Molvies were against two nation theory i would say that first of all there is not a single example where Muslims separated from any other religion on the basis of religion only. If it is so then why large junk of Muslims were left in india (though examples are there that some of Muslims willingly opted to live in India).  Secondly, Molvies believe that with the separate countries Muslims will be divided and they might be treated badly by Hindus and elite culture (as being faced in Pakistan right now). They said Muslims of both countries will live miserable life. As we know Pakistan was allotted with very basic infrastructure intentionally, while India occupied the major portion of resources.  Imagine if we were not divided then counting of Muslims as whole in India, Pakistan and Bangladesh is around 60 crore. No hindu would ever dare to deprive Muslims from their basic rights of liberty, self respect and earning and would not kill Muslims in India and Kashmir.  

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More