ٹک ٹاک پر پابندی نے بھارتی نوجوانوں کے دل توڑ دیے،جذباتی الوداعی پیغام وائرل

بھارت:ٹک ٹاک پر پابندی سےمعاشی بحران اور ٹک ٹاکرز کے بے روزگار ہونے کا خطرہ

بھارتی حکومت نے چین کے ساتھ تنازعے میں اپنا وار کرکے خود اپنے شہریوں کو ہی نقصان پہنچا ڈالا، ملک میں چینی موبائل ایپلیکیشن ٹک ٹاک پر پابندی سے ہزاروں کی تعداد میں بھارتی ٹک ٹاکرز پریشان ہوگئے۔

کسی بھی ملک کی حکومت بین الاقوامی موبائل ایپلیکیشن اور ویب سائٹس کو اپنے ملک میں استعمال کرنے پر پابندی عائد کرسکتی ہے، بھارت سرکار نے بھی سرحد پر چینی فوج سے منہ کی کھانے کے بعد یہ وار کیا اور ملک میں مشہور چینی ویڈیو ایپلیکیشن ٹک ٹاک پر پابندی عائد کردی۔

اس ایپلیکیشن پر پابندی کے بعد چینی کمپنی کو تو ضرور نقصان ہوا ہوگا مگر بھارتی شہری بھی اس فیصلے سےمتاثر ہورہے ہیں، دنیا بھر میں لاکھوں افراد ٹک ٹاک کو اپنا ذریعہ معاش بناچکے ہیں، نوجوان نسل نت نئی ویڈیوز بنا کر ٹک ٹاک کے ذریعے لاکھوں روپے ماہانہ کمارہے ہیں بھارت میں اس پابندی کے بعد ملک کے ہزاروں نوجوانوں کے بے روزگار ہونے کا خد شہ ہے۔

ٹک ٹاک سب سے زیادہ آمدن بھارت میں کماتی ہے، اور بھارت میں تقریبا12 کروڑ سے زائد لوگ ٹک ٹاک استعمال کرتے ہیں اور اب یہ تمام افراد بھارت میں حکومت کی جانب سے لگائی گئی پابندی کے باعث پریشان ہیں۔

مشہور ٹک ٹاکرز نے اس فیصلے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس پلیٹ فارم کو خدا حافظ کہا جس نے انہیں اپنی صلاحیتوں کو دنیا بھر کے سامنے رکھنے کا موقع دیا۔

ان بھارتی نوجوانوں کا کہنا تھا کہ ٹک ٹاک بھارت میں بین ہوگیا ہے، ہم نے بہت محنت کی تھی ٹک ٹاک پر مشہور ہونے کیلئے، ایک صارف نے کہا کہ میں جانتا ہوں میرے خواب ٹوٹ رہے ہیں اور میں یہ بھی جانتا ہوں کہ اس پابندی سے میں اپنے خوابوں کی تعبیر سے بہت دور چلا جاؤنگا۔

مشہور بھارتی ٹک ٹاکر شہزاد اکبر کا کہنا تھا کہ پچھلے ڈیڑھ سال میں میں نے عوام کو انٹرٹین کرنے کیلئے بہت سی ویڈیوز بنائیں، مجھے ابھی پتا چلا کہ ٹک ٹاک بین ہورہی ہے،اس بات سے شدید افسوس ہوا ہے کیونکہ یہاں تک پہنچنے کیلئے بہت مشکل سفر طے کرنا پڑا تھا۔

کچھ نوجوان اپنے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے اور رو پڑے، ان کا کہنا تھا کہ ٹک ٹاک بین ہونے کے بعد فینز انسٹا گرام اور یو ٹیوب پر انہیں فالو کرسکتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >