بھارت کا ایک بار پھر دشمن کی گولی کا بھارتی فلم سے جواب دینے کا فیصلہ

جس کا تھا انتظار وہی شاہکار آنے کو ہے بےتاب، بھارت کا ایک بار پھر دشمن کی گولی کا بھارتی فلم سے جواب دینے کا فیصلہ

بھارتی اداکار اور پروڈیوسر اجے دیوگن نے وادی گلوان میں 20 بھارتی فوجیوں کی ہلاکت پر فلم بنانے کا فیصلہ کر لیا۔ جی ہاں بھارت پر یہ حقیقت آشکار ہو چکی کہ میدان جنگ میں وہ چین کا بال بھی بیکا نہیں کر سکتا اس لیے اس نے اپنے عوام کو اور آئندہ نسلوں کو اُلو بنانے کے لیے پھر سے ایک فلم گھڑنے کی تیاری کر لی ہے۔

15جون2020 کو لداخ میں واقع وادی گلوان میں چینی علاقے میں گھسنے پر بہادر چینی افواج نے بھارتی فوج کے20 سورماؤں کو دھر لیا اور ان کی خوب درگت بنائی، چینی فوج کا تشدد اس قدر شدید تھا کہ ایک افسر سمیت20 کے 20 بھارتی فوجی ہلاک ہو گئے۔

دراصل 1975 کے بعد یہ پہلا موقع تھا جب بھارتی فوج نے چینی فوج کے ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کر زور آزمائی کی کوشش کی تھی جس پر بھارتی فوج کو منہ کی کھانا پڑی۔

اب اس واقع پر اجے دیوگن نے فلم بنانے کا فیصلہ کیا ہے جس میں اگرچہ مرکزی کردار کا ابھی فیصلہ نہیں ہوا مگر فلم کی دوسری کاسٹ کے لیے کرداروں کا حتمی فیصلہ تقریباً کر لیا گیا ہے۔

اجے دیو گن کے مطابق وہ اس فلم میں وادی گلوان میں ہونے والے پرتشدد واقعہ کو فلمانا چاہتے ہیں یا پھر یوں کہیئے کہ وہ کسی نہ کسی طرح چین کے ہاتھوں لال ہوئے چہرے پر میک اپ کر کے اسے چھپانا چاہتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >