برطانیہ کی 13 یونیورسٹیاں دیوالیہ ہونے کے دہانے پر پہنچ گئیں

کورونا وائرس کے باعث پیدا شدہ صورتحال کے باعث برطانیہ کی متعدد یونیورسٹیوں کی مالی حالت ابتر ہوگئی ہے۔

تازہ ترین سروے کے مطابق اگر برطانوی حکومت نے مالی مدد فراہم نہ کی تو 13 یونیورسٹیوں کو نادہندہ ہونے جیسے حقیقی خطرات لاحق ہیں۔برطانوی میڈیا کے مطابق انسٹیٹیوٹ فار فسکل سٹڈیز کا کہنا ہے کہ ان یونیورسٹیوں میں جہاں دیگر ممالک کے طلبا بھی زیر تعلیم ہیں کی آمدن میں فوری طور پر کمی واقع ہوئی ہے۔

خبردار کیا گیا ہے کہ کم درجات یا کم شہرت رکھنے والی یونیورسٹیوں پر بھی خطرات کے بادل منڈلا رہے ہیں۔ تحقیق کاروں کے مطابق جامعات کے شعبے کو شدید مالی بحران کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے یعنی اس شعبے کی آدھی تک سالانہ کمائی کم ہو سکتی ہے۔

ایک اندازے کے مطابق 11 ارب پاؤنڈز کے خسارے کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے جو ان یونیورسٹیوں کی سالانہ آمدن کا ایک چوتھائی حصہ بنتا ہے۔برطانوی محکمہ تعلیم کا کہنا ہے کہ مئی میں یونیورسٹیوں کے لیے حکومت نے مالی مدد کا اعلان کیا تھا جس سے یونیورسٹیوں کو مدد ملے گی اور ملازمتوں کو بھی خطرہ نہیں رہے گا۔

اس کے علاوہ برطانوی محکمہ تعلیم نے یہ بھی کہا کہ آمدن کا مسئلہ حل کرنے کے لیے تعلیم کا شعبہ 2.6 بلین پاؤنڈز کی ٹیوشن فیس سے بھی مسائل پر قابو پانے کی کوشش کرے بصورت دیگر حکومتی امداد کے ساتھ مسائل کو قابو کرنے کی ہی کوشش کی جا سکتی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >