امریکہ میں موجود تارکین وطن کے لیے بڑی خوشخبری آنے کو ہے

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکہ میں موجود تارکین وطن کے حوالے سے بڑا فیصلہ کرنے کا اعلان کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ میں موجود تارکین وطن کو رعایت دی جائے گی۔

صدر ٹرمپ نے کہا ہے کہ وہ نوجوان تارکین وطن کو شہریت دینے کیلئے کوئی راستہ نکال رہے ہیں لوگ اس سے خوش ہوں گے۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ وہ ایمیگریشن کے بارے میں جلد ہی ایک نئے انتظامی حکم نامے پر دستخط کرنے والے ہیں۔

اس میں ان نوجوانوں کو شہریت دینے کی راہ ہموار کی جائے گی جو اپنے والدین کے ہمراہ بچپن میں غیر قانونی طور پر امریکہ آئے تھے۔ ٹرمپ نے کہا کہ یہ منصوبہ والدین کے ہمراہ بچپن میں غیر قانونی طور پر امریکہ آنے والے بچوں کے زیر التوا پروگرام یعنی ڈی اے سی اے کے حق میں بنایا گیا ہے۔

امریکی صدر نے کہا کہ اس پروگرام کے تحت ان کو امریکہ میں قیام کی عارضی اجازت ملی ہے۔ ہم ان کی شہریت کے لیے راستہ نکال رہے ہیں اور اب جاری کی اجانے والا انتظامی حکم نامہ اہلیت کی بنیاد پر ہوگا۔

اس منصوبے میں شہریت کے علاوہ مضبوط تر سرحدی سیکورٹی اور اہلیت کی بنیاد پر مستقل اصلاحات شامل ہوں گی۔ لیکن عام معافی نہیں دی جائے گی۔

ٹرمپ کے اس بیان پر تنقید کرتے ہوئے ری پبلکن سینیٹر ٹیڈ کروز نے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ آئینی طور پر صدر کو انتظامی حکم نامے کے ذریعے شہریت کے لیے راستہ کھولنے کا اختیار صفر فیصد یعنی نہ ہونے کے برابر ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >