جوبائیڈن نے کاملا ہیرئس کو نائب صدارتی امیدوار چن لیا، ٹرمپ کی تنقید

امریکی ڈیموکریٹ صدارتی امیدوار جوزف جوبائیڈن نے سیاہ فام خاتون کاملا ہیرئس کا انتخاب نائب صدارتی امیدوار کیلئے کرلیا۔کاملا ہیرئس کے نام کی توثیق ڈیموکریٹ کنونشن میں کی جائے گی۔

کاملا ہیرئس نائب صدارتی امیدوار کے لیے نامزد پہلی ڈیموکریٹ سیاہ فام شخصیت ہیں۔انکی والدہ ایک شیاملا گوپلان ہندو خاتون اور کینسر ریسرچر تھیں جس نے امریکہ میں قیام کے دوران ایک امریکی شخص سے شادی کرلی۔ کاملاہیرئس کی والدہ کا تعلق بھارت کے شہر چنائی سے تھا۔ کیلی فورنیا سے منتخب سینیٹر ہیں، جوبائیڈن کی ناقد رہ چکی ہیں اور ماضی میں وہ جوبائیڈن کو تنقید کا نشانہ بناچکی ہیں۔

کاملا ریاست کیلی فورنیا کی سابق اٹارنی جنرل بھی رہ چکی ہیں اور وہ اس سے قبل ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار بننے کی دوڑ میں جو بائیڈن کے مخالف تھیں۔

صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے کہا کہ ان کے لیے اعزاز ہے کہ انہوں نے کاملا ہیرئس کو چنا ہے، میں نے اپنے بیٹے اور کاملا ہیرئس کو بڑے بنکوں سے لڑتے دیکھا ہے اور لوگوں کی زندگیاں بہتر بناتے دیکھا ہے، انہوں نے خواتین اور بچوں کو استحصال سے بچانے کیلئے بہت کام کیا ہے۔ مجھے پہلے بھی فخر تھا اور آج بھی کاملا کو نائب صدارتی امیدوار بناتے ہوئے فخر ہے۔

کاملا ہیرئس کو صدارتی امیدار بنانے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کڑی تنقید کی اور کہا کہ کاملا ہیرئس امریکی سینیٹ کی سب سے ہولناک رکن ہیں، مجھے حیرانی ہے کہ جو بائیڈن نے انہیں اپنے نائب کیلئے کیسے چن لیا۔

امریکی صدر ٹرمپ نے کاملا ہیرئس کو بے ادب قرار دیتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کے جسٹس بریٹ کیواناگ کی 2018میں توثیق کے موقع پر بھی ہیرئس انتہائی بے ادب تھیں


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>