دنیا کے بڑے بڑے بینک منی لانڈرنگ میں ملوث ہیں، امریکی ادارے کاانکشاف

امریکی ادارے فن سین نے انکشاف کیا ہے کہ دنیا کے بڑے بڑے بینک منی لانڈرنگ، دھوکہ دہی اور کالے دھن کو سفید کرنے میں ملوث پائے گئے ہیں۔

دنیا بھر کو منی لانڈرنگ اور جرائم کو مالی معاونت فراہم کرنے کے خلاف قانون سازی کا درس دینے والے ممالک خود اس میں ملوث نکلے، دنیا کے بڑے بڑے بینک منی لانڈرنگ اور جرائم پیشہ افراد کو پیسے کی منتقلی میں معاونت فراہم کرنے سے متعلق انکشاف سامنے آگیا ہے۔

فن سین کی جانب سے سامنے آنے والی نئی دستاویزات میں کیے گئے انکشافات نے دنیا بھر میں ہلچل مچادی ہے، رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ کیسے دنیا کے سب سے بڑے بینک کالے دھن کو سفید کرتے ہیں۔

فن سین کی رپورٹس کے مطابق دنیا بھر کے مجرموں کی جانب سے گمنام برطانوی کمپنیوں کا نام استعمال کرکے کالا دھن چھپایا گیا، امریکہ کے بڑے بینکوں میں سے ایک بینک نے بدنام زمانہ مجرم کو ایک ارب ڈالر سے زائد کی منتقلی میں مدد فراہم کی۔

وکی لیکس کے بعد سامنے آنے والی فن سین کی یہ دستاویزات ڈھائی ہزار سے زائد لیک شدہ فائلز پر مشتمل ہیں جن میں کیے گئے انکشافات کے ساتھ ان کے حوالے سے شواہد اور تمام تر مطلوبہ تفصیلات بھی پیش کی گئی ہیں، ان تمام دستاویزات کا تبادلہ بھی بین الاقوامی صحافتی تنظیم آئی سی آئی جے سے کیا گیا۔

یاد رہے کہ آئی سی آئی جے وہی تنظیم ہے جس نے 2016 میں پاناما لیکس کے نام سے کچھ دستاویزات لیک کی تھیں جن میں دنیا بھر سے تعلق رکھنے والے افراد کی آف شور کمپنیوں اور ان کے تحت لیے جانے والے اثاثوں کی تفصیلات منظر عام پر آئی تھیں، اور اسی کے بعد پاکستان میں اس وقت کے وزیراعظم نواز شریف کے خلاف مقدمات کا آغاز ہوا تھا جن میں آگے چل کر انہیں سزا ہوئی تھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >