یورپ میں کورونا وائرس کی سنگین صورتحال ، ڈبلیو ایچ او نے لمحہ فکریہ قراردیدیا

گزشتہ ہفتے یورپ میں 3 لاکھ کے قریب نئے کورونا کیسز ریکارڈ کیے گئے جس کے بعد عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے اسے لمحہ فکریہ قرار دیتے ہوئے خبردار کر دیا ہے۔

یورپ کے کئی ممالک میں کورونا کی بگڑتی ہوئی موجودہ صورتحال کے تحت دوبارہ لاک ڈاؤن کرنے پر غور کیا جا رہا ہے اور اسی تناظر میں سپین کے شہر میڈرڈ میں جمعہ کے روز ہزاروں شہریوں نے دوبارہ لاک ڈاؤن کے اعلان پر احتجاج کیا جس میں احتجاجی مظاہرین نے ریجنل چیف کے استعفے کا مطالبہ کیا۔

اس حوالے سے ڈبلیو ایچ او کے عہدیدار نے کہا کہ یورپ میں ٹرانسمیشن ریٹ اور کورونا کیسز کی تعداد میں خوفناک حد تک اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے جس کے باعث اس صورتحال کو یورپ کے لیے لمحہ فکریہ کہا جانا چاہیے، انہوں نے کہا کہ اب یہاں ٹیسٹنگ کی سہولیات کے ساتھ ساتھ طبی امداد کو بھی متحرک کیا جانا چاہیے۔

برطانیہ میں موجود ڈبلیو ایچ او کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ٹیسٹنگ کی صلاحیت بڑھنے سے ٹرانسمیشن کے اثرات کو جانچنے میں آسانی ہوئی ہے مگر کورونا کی دوسری لہر کی بڑی وجہ لوگوں کا سوشل ڈسٹینسنگ کو نظر انداز کرنا ہے۔

اس صورتحال کو قابو کرنے کے لیے برطانوی حکومت نے رات 10 بجے سے صبح5 بجے تک کے لیے تمام کاروبار بند کرنے اور لوگوں کو اپنے گھروں میں رہنے کی ہدایت کی ہے۔

برطانوی ہیلتھ سیکرٹری میٹ ہان کاک کا کہنا ہے کہ کورونا کو قابو کرنے کے لیے آخری حل دوبارہ لاک ڈاؤن لگانا ہے وہ فی الحال ایسا ہوتا نہیں دیکھ رہے مگر صورتحال بگڑنے پر اپنے لوگوں کو محفوظ رکھنے کے لیے وہ کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں۔

فرانس میں بھی ایک روز میں 10ہزار سے زائد کورونا کیسز سامنے آنے پر عوام میں بے چینی بڑھنے لگی ہے اور فرانسیسی وزرا خود ہی ایک دوسری کی کارکردگی پر سوالات اٹھانے لگے ہیں۔

فرانس کی کورونا متاثرین ایسوسی ایشن کے وکیل فیبرک ڈی وزیو کا کہنا ہے کہ فرانس کی موجودہ صورتحال دیکھ کر لگ رہا ہے کہ اس ملک پر صرف حکومت کی جا رہی ہے نہ کہ کوئی اس کو چلا رہا ہے۔

سپین کی بات کی جائے تو وہاں کورونا کے مریضوں کی تعداد 6لاکھ 59 ہزار334 ہو گئی ہے جبکہ 30 ہزار495 لوگ اس وائرس سے ہلاک ہو چکے ہیں اور 1345 لوگ ابھی بھی تشویشناک حالت میں ہسپتالوں میں موجود ہیں۔

فرانس میں کورونا کیسز کی تعداد 4 لاکھ 52 ہزار 763 تک پہنچ چکی ہے اور ہلاکتوں کی تعداد 31ہزار285 ہو گئی ہے، برطانیہ میں اب تک 3 لاکھ 94 ہزار257 کورونا کیسز سامنے آ چکے ہیں جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 41ہزار777 تک پہنچ چکی ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>