بھارت کے محکمہ دفاع کا ملازم پاکستان کیلئے جاسوسی کرنے کے الزام پر گرفتار

بھارت کے محکمہ دفاع کا ملازم پاکستان کیلئے جاسوسی کرنے کے الزام پر گرفتار

بھارتی محکمہ دفاع کا ایک ملازم مہیش کمار مبینہ طور پر ایک لڑکی کے ذریعے پاکستانی ایجنسیوں کو حساس معلومات فراہم کرنے پر گرفتار کرلیا گیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی محکمہ دفاع کے ایک سویلین ملازم کو ہریانہ پولیس نے گرفتار کرلیا ہے، مہیش پر الزام ہے کہ وہ ایک عورت سے ڈھائی سال سے رابطے میں تھا جو مبینہ طور پر پاکستان کی ملٹری انٹیلیجنس (ایم آئی) کیلئے کام کرتی تھی اور مہیش سے حساس معلومات نکلوا کر اپنی ایجنسی کو فراہم کرتی تھی۔

رپورٹ کے مطابق لکھنؤ کی ایم آئی کو ایک خبر ملی کہ مہیش محکمہ کی حساس معلومات ایک عورت کو منتقل کررہا ہے، کمار اس عورت کو مادام جی کہہ کر بلاتا تھا، جس کے بعد مشن مادام جی لانچ کیا گیا اور مہیش کو گرفتار کرلیا گیا۔

پوچھ گچھ کے دوران مہیش نے قبول کیا کہ اس نے 2018 میں ” حرلین گل” نامی ایک فیس بک اکاؤنٹ کو فرینڈ ریکوسٹ بھیجی تھی، جو قبول کی گئی ، ہم دوست بن گئے اورہمارے درمیان بات چیت شروع ہوگئی۔

لکھنؤ ایم آئی کے مطابق یہ فیس بک اکاؤنٹ مبینہ طور پر پاکستانی ملٹری انٹیلیجنس کی ایک جاسوس کا تھا، مگر یہ اکاؤنٹ چند ماہ بعد ڈی ایکٹیو ہوگیا، جس کے بعد 2019 میں اس خاتون نے دوبارہ مہیش کو ایک دوسرے اکاؤنٹ سے ریکوسٹ بھیجی، اس اکاؤنٹ کا نام ہرمان کور تھا، مہیش نے ریکوسٹ قبول کی اور ان کے درمیان پہلے فیس بک میسنجر اور بعد میں واٹس ایپ پر بات چیت جاری رہی۔

رپورٹ کے مطابق مہیش نے پوچھ گچھ کے دوران یہ تسلیم کیا کہ اس نے جے پور کی آرمی بریگیڈ، سینئر افسران اور دیگر حساس مقامات اور شخصیات سے متعلق معلومات اس خاتون کو پہنچائی، خاتون نے مہیش سے یہ وعدہ بھی کیا کہ اگر اس نے تعاون جاری رکھا تو وہ جلد اسے دہلی ٹرانسفر بھی کروادے گی۔

مہیش نے اعتراف کیا کہ اس نے اپنے بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات بھی اس خاتون سے شیئر کی تھیں، جس میں بطور تحفہ 2 بار 5، 5 ہزار کی ٹرانزیکشنز کی گئیں۔

حالانکہ مہیش جے پور کے محکمہ ایم ای ایس میں صفائی کے عملے کا حصہ تھا مگر اس کے پاس حساس ترین معلومات سمیت بہت سے دستاویزات کی تصاویر بھی برآمد ہوئیں۔

مہیش کے خلاف سیکرٹ ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا جاچکا ہے، ملزم کا کورونا ٹیسٹ ہوجانے کے بعد اسے عدالت کے روبرو پیش کیا جائے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >