وزیراعظم عمران خان کی کیوی وزیراعظم کو انتخابات میں کامیابی پر مبارکباد

نیوزی لینڈ کے پارلیمانی انتخابات میں حکمران جماعت نے ایک بار پھر اپنی مخالف جماعت کو بھاری اکثریت سے ہرا کر میدان مار لیا اور اگلے تین سال کے لئے حکومت کرنے کی راہ ہموار کر لی، جیسنڈا آرڈرن کی اس کامیابی کے ساتھ ہی ان کی حریف جماعت نے شکست تسلیم کر لی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے جیسنڈا آرڈرن کو  انتخابات میں کامیابی  پرمبارک باد دی۔ وزیراعظم نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ”ان کےمشفقانہ اندازِ قیادت نےنیوزی لینڈ ہی نہیں پاکستان میں بھی دل مسخر کئےہیں۔میں پاکستان اور نیوزی لینڈ کےمابین دوستانہ تعلقات میں مزید پختگی اور تعاون میں وسعت کاخواہاں ہوں”

غیر ملکی میڈیا کے مطابق لیبر پارٹی کی حریف اور اپوزیشن جماعت نیشنل پارٹی کی رہنما جوڈتھ کولنز نے اپنےحامیوں سے خطاب کرتے ہوئے عام انتخابات میں اپنی شکست کو تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ لیبر پارٹی نے انتخابات میں غیر معمولی نتائج حاصل کیے، جس پر انھوں نے وزیرِ اعظم جیسنڈا آرڈرن کو ٹیلی فون کر کے مبارک باد دی ہے۔

اپوزیشن جماعت نیشنل پارٹی کی رہنما جوڈتھ کولنز کا اپنےحامیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ نیشنل پارٹی ہمیشہ کی طرح ایک مضبوط اپوزیشن ثابت ہو گی اور حکومت کے نا کام وعدوں کا حساب کتاب کرتی رہے گی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق نیوزی لینڈ کے عام انتخابات نے اس مرتبہ کے انتخابات میں آرڈرن کا مقابلہ دائیں بازو کی قدامت پسند رہنما جوڈتھ کولنز سے تھا، کولنز کی پارٹی نے لیبر پارٹی کے مقابلے میں 27 فی صد نشستیں حاصل کی ہیں جب کہ لیبر پارٹی نے تقریباً 50 فی صد نشستیں حاصل کر لی ہیں، تاہم ووٹنگ کے نتائج کا سرکاری اعلان تاحال نہیں کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ نیوزی لینڈ میں حکومت سازی کے لیے پارلیمان کی 61 نشستوں پر کامیابی ضروری ہوتی ہے ورنہ اکثریت نہ ملنے کی صورت میں دوسری جماعتوں کے ساتھ ملکر مخلوط حکومت بنانا پڑتی ہے، تاہم غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج سے لگتا ہے کہ لیبر پارٹی کی جیسنڈا آرڈرن اگلے تین سال کے لئے بھی باآسانی وزیراعظم بن جائیں گی۔

نیوزی لینڈ: جیسنڈا آرڈرن کی پارٹی کی پارلیمانی انتخابات میں تاریخی فتح


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >