فرانس میں بیٹی سمیت 160 بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنانے والا ملزم گرفتار

فرانس میں اٹلی سے تعلق رکھنے والے 52 سالہ ملزم کو 160 بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا،جرمنی کی درخواست پرملزم کو گرفتار کیا گیا، ملزم نے جرمنی سے فرار ہوکر فرانس میں اپنے ایک دوست کے گھر چھپا ہوا تھا۔

پولیس ریکارڈ کے مطابق ملزم نے کم عمر بچوں پر جنسی حملوں سے لے کر ان کے ریپ تک کے مجموعی طور پر 160 جرائم کا ارتکاب 2000ء میں شروع کیا تھا، جب اس کی عمر 34 برس تھی اور قانون کی گرفت میں آئے بغیر مسلسل 14 سال تک اپنے گھناؤنے جرائم کا مرتکب ہوتا رہا تھا۔

ملزم پر جرمنی میں 2000 سے 2014 کے درمیان اپنی سگی بیٹی سمیت 160 بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے پر 122 مقدمات زیر سماعت تھے، سفاک ملزم نے اپنے دوستوں، رشتہ داروں اور آفس کولیگز کے بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا تھا،

اے ایف پی کے مطابق فرانسیسی پولیس کا کہنا ہے کہ اس اطالوی شہری کے خلاف صرف جرمنی میں ہی بچوں پر جنسی حملوں اور ان کے ریپ کے 122 واقعات زیر تفتیش ہیں۔

فرانس پولیس نے ملزم کی شناخت ظاہر نہیں کی، جلد ملزم کو جرمن پولیس کے حوالے کرنے کا عندیہ دیتے ہوئے بتایا کہ ملزم نے اعتراف جرم کیا ہے اور یورپی قوانین کے تحت ملزم کو جرمنی کے حوالے کردیا جائے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >