مسلم دنیا میں فرنچ مصنوعات کا بائیکاٹ،فرانسیسی معیشت کو اربوں ڈالر کا دھچکا

مسلم دنیا میں فرنچ مصنوعات کا بائیکاٹ،فرانسیسی معیشت کو اربوں ڈالر کا دھچکا

غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں فرانسیسی صدر کے آخری نبی حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کے خاکوں کی اشاعت پر متنازعہ بیان کے بعد سے فرانسیسی مصنوعات کا بائیکاٹ کیا جارہا ہے، جس سے فرانس کی معیشت کو بڑا دھچکا لگ سکتا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اگر مسلم ممالک کی جانب سے فرانسیسی مصنوعات کا بائیکاٹ اسی طرح سے جاری رہا تو فرانس کو مسلم ممالک کے ساتھ ہونے والی ایک سو ارب ڈالر کی تجارت کے نقصان کا بڑا جھٹکا لگتا ہے اور فرانس کی معیشت کو اربوں ڈالر کا نقصان اٹھانا پڑے گا۔

ترکی جو فرانس کی سب سے بڑی برآمدی مارکیٹ ہے، گستاخانہ خاکوں کی اشاعت پر متنازعہ بیان کے بعد سے ترکی کے صدر طیب اردوان پہلے ہی اپنی قوم سے فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کی اپیل کرچکے ہیں، جس کے بعد سے ترکی سمیت دنیا بھر میں مسلمانوں کی جانب سے فرانسیسی مصنوعات کا بائیکاٹ کیا جارہا ہے۔

بعد ازاں ترکی کی جانب سے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت پر فرانس کے خلاف قانونی اور سفارتی کاروائی کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے، ترکی نے فرانس کے خلاف سفارتی اور قانونی کارروائی کی مہم کا حصہ بننے کے لیے دیگر مسلم ممالک سے بھی اپیل کی ہے، جبکہ ترکی میں فرانس کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی اور ترکی کی تمام مارکیٹوں سے فرانسیسی مصنوعات کو بھی ہٹا دیا گیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >