فرانس: 2 مختلف حملوں میں 4 افراد ہلاک، متعدد زخمی

فرانسیسی شہر نیس میں ایک نامعلوم حملہ آور نے چاقو سے وار کرکے 3 افراد کو قتل جبکہ متعدد افراد کو زخمی کردیا۔ یہ واقعہ فرانس کے شہر نیس میں نوٹرے ڈیم چرچ کے قریب پیش آیا۔ نیس شہر کے میئر نے اسے دہشت گردی قرار دیتے ہوئے سخت الفاظ میں مذمت کی۔

میئر کرسچیان ایستروسی کے مطابق قتل ہونے والوں میں سے ایک شخص نوٹرے ڈیم چرچ کے نگرانوں میں بھی شامل تھا۔ ایستروسی نے یہ بھی کہا کہ حملہ آور نے ایک عورت کا سر کاٹ دیا اور وہ مسلسل ’’اللہ اکبر‘‘ کے نعرے لگا رہا تھا۔

نیس میں ہونےو الے حملے کے کچھ ہی گھنٹوں بعد جنوبی فرانس کے شہر اوانیو کے نواحی علاقے میں پولیس نے ایک بندوق بردار کو شخص کو قتل کردیا۔ پولیس کے مطابق بندوق بردار شخص ’’اللہ اکبر‘‘ کے نعرے لگا رہا تھا۔

دفتر خارجہ نے ان حملوں سے متعلق ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان فرانس کے شہر نیس کے اندر آج ہونے والے حملے کی شدید مذمت کرتا ہے۔ قیمتی جانوں کے ضیاع پر رنج وغم اور افسوس کا اظہار کرتے ہیں اور متاثرہ خاندانوں سے ہمدردی ہے۔ خاص طورپر عبادت گاہوں کا نشانہ بنانے کا کوئی جواز نہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >