ٹرمپ کے دھاندلی الزامات کے بعد ایوانکا نےفراڈ کی تحقیقات کو سیاسی انتقام کہہ دیا

میڈیا رپورٹس کے مطابق دوسری مدت میں شکست کے چند دن بعد ہی مختلف نشریاتی اداروں نے ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف گزشتہ 4 سال میں لگائے جانے والے الزامات اور ان کے خلاف کی جانے والی ابتدائی تحقیقات پر تجزیہ کرتے ہوئے بتایا تھا کہ جیسے ہی ٹرمپ صدارت کے عہدے سے ہٹیں گے، انہیں حاصل استثنیٰ بھی ختم ہو جائے گا، جس کے بعد ممکنہ طور پر وہ متعدد کرمنل اور سول کیسز کا سامنا کریں گے اور ہوسکتا ہے کہ انھیں جیل کی ہوا بھی کھانا پڑے۔

دوسری مدت کے لیےالیکشن لڑنے والے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو شکست کا سامنا کرنا پڑا، جن پر گزشتہ چار سال کے دوران متعدد کرپشن، ٹیکس چوری، مارکیٹنگ اور بزنس فراڈ سمیت خواتین کے جنسی استحصال کے الزامات لگائے گئے ہیں، جن کی بنیاد پر ڈونلڈ ٹرمپ کو ممکنہ قانونی کارروائی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

بعدازاں اب نشریاتی اداروں کی رپورٹس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ نیویارک کے کے پراسیکیوٹر نے صدارتی عہدہ چھوڑنے سے قبل ہی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف جاری دو تحقیقات میں تیزی کردی ہے، جس پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ نے رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف تحقیقات کے ذریعے ان کے خاندان کو "ہراساں” کیا جا رہا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ نے سماجی رابطہ کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر نیویارک ٹائمز کی رپورٹ شیئر کرتے ہوئے اپنی ٹویٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ "ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف دونوں تحقیقات 100 فیصد ڈیموکریٹس کی جانب سے کروائی جا رہی ہیں اور ان تحقیقات کے ذریعے ان کے خاندان کو "ہراساں” کیا جا رہا ہے”

 

امریکی صدر کی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ نے  جاری ٹویٹ میں دعویٰ کرتے ہوئے مزید لکھا کہ ” ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف تحقیقات 100 فیصد سیاسی اور بے بنیاد ہیں، تفتیش کروانے والے اچھی طرح جانتے ہیں کہ جن الزامات کی بنا پر تحقیقات کی جا رہی ہیں، ان میں کوئی سچائی نہیں ہے، ہم نے کسی طرح کا کوئی فائدہ نہیں اٹھایا”

خیال رہے کہ امریکہ میں چند روز قبل صدارتی انتخاب کے لیے ہونے والے عام انتخابات میں موجودہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے مخالف ڈیموکریٹک امیدوار جوبائیڈن کے ہاتھوں غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے، تاہم ڈونلڈ ٹرمپ نے عام انتخابات کے نتائج سے قبل ہی یہ کہنا شروع کردیا ہے کہ دھاندلی کے ذریعے ان کے ووٹ چوری کئے گئے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >