پیوٹن نے جو بائیڈن کو امریکی صدرماننے سے انکار کردیا

روسی صدر ولادیمر پیوٹن نے نو منتخب صدرجو بائیڈن کو امریکی سربراہ تسلیم کرنے سے انکار کردیا ہے۔

بین الاقوامی خبررساں ادارے وائس آف امریکا کی رپورٹ کے مطابق سرکاری ٹی وی چینل کو انٹرویو کے دوران روسی صدر نے کہا ہے کہ جب تک امریکہ کے صدارتی انتخابات کے نتائج کو مخالف جماعت تسلیم نہیں کرلیتی ہم جو بائیڈن کو صدر تسلیم نہیں کرسکتے۔

ولاد یمر پیوٹن نے کہا ہے کہ امریکی عوام کے اعتماد اور مینڈیٹ حاصل کرنے والے کسی بھی لیڈر کے ساتھ مل کر کام کرنے کیلئے تیار ہیں، مگر جب تک انتخابی عمل پر سوالات قائم ہیں اس وقت تک امریکی صدر کو تسلیم نہیں کیا جاسکتا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ابھی صدارتی الیکشن کے نتائج کی قانونی طریقے سے تصدیق بھی نہیں ہوئی ہے، اور جو بائیڈن کے حریف کے تحفظات بھی برقرار ہیں، اس لیے جو بائیڈن کو صدر تسلیم کرنا قبل ازوقت اقدام ہوگا۔

میزبان کی جانب سے سوال کیا گیا کہ نو منتخب صدر کومبارکباد نہ دیئے جانے سے دونوں ملکوں کے درمیان مستقبل میں تعلقات خراب ہونے کا خدشہ نہیں ہے؟

روسی صدر نے اس سوال کے جواب میں معنی خیز مسکراہٹ کے ساتھ جواب دیا کہ پہلے سے تباہ حال تعلقات مزید کیا خراب ہوں گے؟

یاد رہے کہ امریکہ کے صدارتی انتخابات میں سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو ڈیموکریٹ امیداور جوبائیڈن نے شکست دیدی ہے، گزشہ انتخابات میں فتح پانے والے ڈونلڈ ٹرمپ پر اس وقت الزام لگا تھا کہ وہ روسی مداخلت کے نتیجے میں الیکشن جیتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >